رسائی کے لنکس

دپیکا پڈکون ،بالی وڈ کی نئی ڈریم گرل بن گئیں


دپیکا نے بالی وڈ کے چھ سالہ کیرئیر میں اتنی کامیابیاں سمیٹیں جتنی لوگ پورے کیرئیر میں حاصل نہیں کرپاتے۔ دپیکا کی فلموں نے اب تک نہ صرف 700 کروڑ روپے سے زیادہ کا بزنس کیا ہے بلکہ وہ 11 ٹاپ برانڈز کے ساتھ ماڈلنگ کے معاہدے بھی کرچکی ہیں

بالی وڈ ہیروئنز کی نئی جنریشن میں سب سے نمایاں نظر آنے والی دپیکا پڈکون گلیمر، اسٹائل، لکس اور ایکٹنگ کی بدولت بالی وڈ کی نئی ڈریم گرل بن گئی ہیں۔

دپیکا کی اینٹری اس انداز میں ہوئی کہ جس کا خواب فلم نگری میں قدم رکھنے والی ہر نئی ہیروئن دیکھتی ہے۔ فرح خان کی ڈائریکٹ کردہ 2007 ءمیں بنی فلم ’اوم شانتی اوم‘ میں شاہ رخ خان کی ہیروئن بن کر دپیکا نے نہ صرف اپنا ٹیلنٹ منوایا بلکہ ان کی خوبصورتی، گلیمر اور پراعتماد انداز کے چرچے بھی ہر طرف ہونے لگے۔

بھارتی میگزین ’انڈیا ٹوڈے‘ کے مطابق دپیکا نے بالی وڈ کے چھ سالہ کیرئیر میں اتنی کامیابیاں سمیٹیں جتنی لوگ پورے کیرئیر میں حاصل نہیں کرپاتے۔ دپیکا کی فلموں نے اب تک نہ صرف 700 کروڑ روپے سے زیادہ کا بزنس کیا ہے، بلکہ وہ 11ٹاپ برانڈز کے ساتھ ماڈلنگ کے معاہدے بھی کرچکی ہیں۔

صرف سال 2013ءکی بات کی جائے تو اس سال اب تک دپیکا پڈکون کی تین فلمیں باکس آفس بلاک بسٹر بن کر 100 کروڑ کلب کی ممبر بن چکی ہیں۔ ان فلموں میں 110کروڑ کا بزنس کرنے والی ’ریس ٹو‘، 184.79 کروڑ کمانے والی ’یہ جوانی ہے دیوانی‘ اور 218.29کروڑ کا بزنس کرنے والی ’چنائی ایکسپریس‘ شامل ہیں۔

سنجے لیلا بنسالی کی ’رام لیلا‘ کے بارے میں بھی فلمی پنڈتوں کی یہی پیشگوئی ہے کہ ایک اور بلاک بسٹر دپیکا کے نام ہونے جا رہی ہے۔

ان بڑی کامیابیوں نے دپیکا کو اپنی حریف کترینہ کیف کے بہت قریب پہنچا دیا ہے جن کی فلموں نے 2012ٰءمیں 319کروڑ روپے کمائے تھے۔کترینہ کیف کی نئی آنے والی فلم ’دھوم3‘ ان کے لئے سال کی سب سے بڑی ہٹ ثابت ہوسکتی ہے۔

دپیکا کہتی ہیں کہ ان کی کامیابی کا کو ئی سیکرٹ فارمولا نہیں۔ بس یہ ہے کہ وہ جو کردار کرتی ہیں مکمل طور پر اس میں ڈھل جاتی ہیں اور یہی وجہ ہے کہ لوگ ان کے کام کو پسند کرتے ہیں۔

دپیکا پڈکون کے بارے میں بات کرتے ہوئے ٹریڈ میگزین باکس آفس کے ایڈیٹر وجیر سنگھ کا کہنا ہے کہ ’دپیکا بطور انسان بھی نمبر ون ہیں۔ وہ اپنے ساتھ کام کرنے والے اداکاروں سے لے کر فلم میکرز اور ہر اس شخص کو اپنے بہترین رویے سے اپنابنا لیتی ہیں جس سے وہ کام کے سلسلے میں جڑتی ہیں۔ دپیکا کی شخصیت کو ذہن میں رکھ کر اسکرپٹ لکھے جاتے ہیں۔‘
XS
SM
MD
LG