رسائی کے لنکس

صدر اوباما نے کہا ہے کہ اُنھوں نے جانسن کو کابینہ کی سطح کی اِس ملازمت کے لیے اِس لیے چُنا، کیونکہ وہ امریکہ کو درپیش خطرات اور چیلنجوں سے خاطر خواہ طور پر آگاہ ہیں

امریکی صدر براک اوباما نے حکومت کے ایک سابق کلیدی وکیل کو ملک کی ’ہوم لینڈ سکیورٹی ایجنسی‘ کے نئے سربراہ کے طور پر نامزد کیا ہے۔

مسٹر اوباما نے جمعے کے دِن، جے جانسن کے ہوم لینڈ سکیورٹی کے سربراہ کےطور پر تقرری کا اعلان کیا۔ وہ ماضی میں محکمہٴدفاع میں ایک چوٹی کے وکیل رہ چکے ہیں۔

ہوم لینڈ سکیورٹی کے وسیع ادارے کے ملازمین کی تعداد دو لاکھ 40 ہزار ہے، جِن کے فرائض منصبی میں امریکی سرحدوں کی چوکسی، بیرونِ ملک قدرتی آفات کے وقت بحالی کا کام سنبھالنے، اور قومی سلامتی کے خطرات پر نگاہ رکھنا شامل ہے۔

مسٹر اوباما نے کہا کہ اُنھوں نے جانسن کو کابینہ کی سطح کی اِس ملازمت کے لیے اِس لیے چُنا، کیونکہ وہ امریکہ کو درپیش خطرات اور چیلنجوں سے خاطر خواہ طور پر آگاہ ہیں۔

صدر نے کہا ہے کہ جانسن نے 2001ء میں امریکہ پر ہونے والےحملوں کے بعد، القاعدہ کی دہشت گرد تنظیم کا قلع قمع کرنے کی پالیسیوں کو مرتب کرنے، اور امریکی فوج میں ہم جنس پرستی پر عائد پابندی کو ہٹانے میں مدد فراہم کی۔

اُن کے بقول، ’وہ وائٹ ہاؤس کے ’سیچوئیشن روم‘ میں موجود رہے ہیں، جب کبھی اُس کی ٹیبل پر فیصلہ کا کوئی مشکل وقت آیا ہے۔‘

اگر سینیٹ اُن کے نام کی توثیق کردیتی ہے، تو چَھپن برس کے جانسن، جینٹ نپولیٹانو کی جگہ لیں گے، جِنھوں نے حال ہی میں ادارے سے رخصت ہوکر، ملک کی کثیر آبادی والی ریاست، کیلی فورنیا میں، یونیورسٹی نظام کی سربراہ کا عہدہ قبول کیا ہے۔
XS
SM
MD
LG