رسائی کے لنکس

شدت پسند گروپ بوکو حرام نےعلاقے میں ہونے والے تازہ خودکش بم حملوں میں لڑکیوں اور خواتین کو جھونکا ہے، جس سے اِن خدشات کو تقویت ملتی ہے کہ اِن حملوں میں وہ اغوا کی گئی خواتین کو استعمال کر رہے ہیں

نائجیریا کی پولیس کا کہنا ہے کہ ایک خاتون بم حملہ آور نے ملک کے شمال مشرقی علاقے، دماتورو کے ایک قصبے میں بس اسٹیشن کے داخلی دروازے کے قریب دھماکہ کیا، جِس کے نتیجے میں کم از کم پانچ افراد ہلاک ہوئے۔
منگل کی علی الصبح ہونے والے اِس دھماکے میں کم ازکم 28 افراد زخمی ہوئے۔

کسی نے اس حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی۔ تاہم، شدت پسند گروپ بوکو حرام نےعلاقے میں ہونے والے تازہ خودکش بم حملوں میں لڑکیوں اور خواتین کو جھونکا ہے، جس سے اِن خدشات کو تقویت ملتی ہے کہ اِن حملوں میں وہ اغوا کی گئی خواتین کو استعمال کر رہے ہیں۔

گذشتہ برس ملک کے شمال مشرقی خطے میں ایک چھوٹے سے قصبے پر بوکو حرام کی جانب سے مارے گئے چھاپے میں، تقریباً 300 اسکول کی بچیاں اغوا کی تھیں؛ جن میں سے 200 سے زائد لڑکیاں اب بھی لاپتا ہیں۔

بوکو حرام جس نے حال ہی میں داعش کے شدت پسند گروہ سے وفاداری کا عہد کیا ہے، اُس نے شمالی نائجیریا میں اسلامی حکمرانی قائم کرنے کی مہم کے ایک حصے کے طور پر اب تک نائجیریا کے 10000 سے زائد شہریوں کو ہلاک کیا ہے۔

نائجیریا کے صدر محمدو بوہاری نے فوج کو احکامات جاری کیے ہیں کہ تین ماہ کے اندر اندر بوکو حرام کی بغاوت کا خاتمہ لایا جائے۔

XS
SM
MD
LG