رسائی کے لنکس

نائیجیریا: شدت پسندوں سے لڑائی سے انکار پر 54 فوجیوں کو سزائے موت


مائیدوگوری نامی علاقے میں تعینات فوج کی ساتویں ڈویژن سے تعلق رکھنے والے ان فوجیوں کی سزائے موت پر فائرنگ اسکواڈ کے ذریعے عملدرآمد کیا جائے گا۔

نائیجیریا میں ایک فوجی عدالت نے ان 54 فوجیوں کو سزائے موت سنائی ہے جنہوں نے شدت پسند گروپ بوکو حرام سے لڑنے سے انکار کیا تھا۔

ان فوجیوں پر بغاوت اور بزدلی کے الزامات عائد کیے گئے تھے۔ انھوں نے اگست میں شمال مشرقی ریاست بورنو کے تین علاقوں سے شدت پسندوں کا قبضہ چھڑانے کے لیے لڑائی سے انکار کیا تھا۔

ان افراد کے ایک وکیل فیمی فالانا کا کہنا تھا کہ مقدمے کا سامنا کرنے والے پانچ دیگر فوجیوں کو بری کر دیا گیا ہے۔

مائیدوگوری نامی علاقے میں تعینات فوج کی ساتویں ڈویژن سے تعلق رکھنے والے ان فوجیوں کی سزائے موت پر فائرنگ اسکواڈ کے ذریعے عملدرآمد کیا جائے گا۔

سزا پانے والے فوجیوں نے شکایت کی تھی کہ انھیں اکثر شدت پسندوں سے لڑائی کے لیے درکار اسلحہ اور گولہ بارود فراہم نہیں کیا جاتا تھا۔

شدت پسندوں نے بورنو اور اداماوا کی ریاستوں میں رواں سال کئی علاقوں پر قبضہ کیا تھا اور ان کے رہنما ابوبکر شیکاؤ نے یہاں خلافت کا اعلان کر رکھا ہے۔

ستمبر میں بھی 12 فوجیوں کو بغاوت اور اپنے کمانڈنگ افسر کو قتل کرنے کی کوشش کے الزام میں سزائے موت سنائی گئی تھی۔

تاحال یہ نہیں بتایا گیا کہ ان سزاؤں پر عملدرآمد کب کیا جائے گا۔

XS
SM
MD
LG