رسائی کے لنکس

وسطی نائیجیریا میں تشدد،120 افراد ہلاک


وسطی نائیجیریا میں تشدد

وسطی نائیجیریا میں تشدد

عینی شاہدین نے کہا ہے کہ نائیجیریا کے فسادزدہ شہر جاس کے قریب ایک لڑائی میں کم از کم 18 افراد ہلاک ہو گئے ہیں ۔

جاس کے جنوب میں واقع ایک دیہات ڈوگو نہاوا کے مقامی رہائشیوں کا کہناہے کہ نامعلوم مسلح افراد نے اس دیہات پر رات کے وقت اچانک دھاوا بولا اور لوگوں پر چاقوؤں اور کلہاڑیوں سے حملے کیے ۔

خبر رساں ادارے رائٹر نے کہا ہے کہ ایک مقامی ڈائریکٹر نے نامہ نگاروں کو 18 نعشیں دکھائیں جو اس دیہات سے لائی گئی تھیں۔

تاہم اموات کی حتمی تعداد کے بارے میں یقینی طور پر کچھ نہیں بتایا گیا۔ ایک مقامی صحافی نے وی او اے کو بتایا کہ اس پورے علاقے میں جابجا لاشیں بکھری ہوئی ہیں ۔

اس حملے کے محرک کا ابھی تک کچھ علم نہیں ہو سکا ہے ۔

جاس میں گزشتہ دس سال کے دوران مسلمانوں اور عیسائیوں کے درمیان بڑی بڑی چار لڑائیاں ہوئی ہیں جن میں سے تازہ ترین جنوری میں ہوئی تھی جس میں کم از کم 325 لوگ ہلاک ہوئے تھے ۔

اس سے قبل کے تصادموں میں کم از کم 200 لوگ 2008ء کے تصادم میں 700 لوگ 2004ء اور ایک ہزار لوگ 2001 ء کے تصادم میں ہلاک ہوئے تھے

XS
SM
MD
LG