رسائی کے لنکس

معاشیات کا نوبیل انعام ہارورڈ اور 'ایم آئی ٹی' کے اساتذہ کے نام


ہارورڈ کے پروفیسر، اولور ہارٹ

ہارورڈ کے پروفیسر، اولور ہارٹ

’رائل سویڈش اکیڈمی آف سائنسز‘ نے پیر کے روز اعلان میں کہا ہے کہ ’کانٹریکٹ تھیوری‘ میں اُن کا کام ’’اصل زندگی میں ٹھیکوں اور اداروں کے لیے قابلِ قدر سمجھ بوجھ کا حامل ہے، ساتھ ہی اس میں کانٹریکٹ کے ڈزائن میں ممکنہ پوشیدہ خطرات‘‘ واضح کیے گئے ہیں

ہارورڈ یونیورسٹی کے اولور ہارٹ اور میساچیوسٹس انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی کے بینٹ ہالسٹروم کو معاشیات کے علوم پر سال 2016 کا نابیل انعام دینے کا اعلان کیا گیا ہے۔

اس بات کا اعلان ’رائل سویڈش اکیڈمی آف سائنسز‘ نے پیر کے روز کیا۔ اعلان میں کہا گیا ہے کہ ’کانٹریکٹ تھیوری‘ میں اُن کا کام ’’اصل زندگی میں ٹھیکوں اور اداروں کے لیے قابلِ قدر سمجھ بوجھ کا حامل ہے، ساتھ ہی اس میں کانٹریکٹ کے ڈزائن میں ممکنہ پوشیدہ خطرات‘‘ واضح کیے گئے ہیں۔

جیوری نے کہا ہے کہ ’’اس سال کی اِن ممتاز شخصیات نے ’کانٹریکٹ تھیوری‘ دی، جس میں ٹھیکے کے ڈیزائن میں متعدد مسائل کے تجزیے کا مربوط طریقہ کار بتایا گیا ہے، جیسا کہ کارکردگی کی بنا پر اعلیٰ منتظمیں کی تنخواہ، کٹوتیاں، اور انشورنس میں مساوی ادائگی کا معاملہ، اور سرکاری شعبے کی نج کاری کی سرگرمیاں‘‘ درج ہیں۔

کمیٹی نے مزید کہا ہے کہ یہ تجزیاتی کام ’’دانش گاہ‘‘ کی مانند ہے، جس سے سیاسی دساتیر میں دیوالیہ پن سے متعلق قانون سازی کے شعبوں میں آئے دن کے شعور کے نکات کو اجاگر کیا گیا ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ ’’ہارٹ اور ہولسٹروم کی جانب سے دیے گئے نئے نظریاتی آلات اصل زندگی میں کانٹریکٹ اور اداروں کو سمجھنے میں قابلِ قدر شعور فراہم کرتے ہیں، ساتھ ہی کانٹریکٹ ڈیزائن میں ممکنہ مسائل کو واضح کیا گیا ہے‘‘۔

دونوں میں 924000 ڈالر کے انعام کی رقم تقسیم ہوگی۔ انعام جیتنے والوں کو سرکاری طور پر 10 دسمبر کو باضابطہ طور پر نوبیل انعام دیا جائے گا، جو انعام کے بانی، الفریڈ نوبیل کی برسی کا دِن ہے، جو سنہ 1896ء میں انتقال کر گئے تھے۔

کمیٹی گذشتہ ہفتے طب، فزکس، کیمسٹری اور امن کے شعبوں میں انعام کا اعلان کرچکی ہے۔

لٹریچر کے نوبیل انعام کا اعلان جمعرات کو کیا جائے گا۔

XS
SM
MD
LG