رسائی کے لنکس

شمالی کوریا کی جوہری تجرباتی مقام پر نئی تعمیرات


امریکی انسٹیٹیوٹ نے متنبہ کیا کہ جاری تعمیراتی کام سے " ظاہر ہوتا ہے کہ شمالی کوریا مستقبل میں اپنے جوہری پروگرام کے تحت کوئی نیا تجربہ کرنے کی تیاری کررہا ہے۔"

امریکہ کے ایک تحقیقی انسٹیٹیوٹ کا کہنا ہے کہ شمالی کوریا میں نیوکلیئر سائیٹ پر ہونے والے حالیہ تعمیراتی کام سے بظاہر یہ معلوم ہوتا ہے کہ پیانگ یانگ زیر زمین اپنا چوتھا ایٹمی تجربہ کرنے کی تیاری کر رہا ہے۔

جان ہاپکنز یونیورسٹی میں قائم یوایس۔کوریا انسٹی ٹیوٹ کے مطابق سیٹیلائیٹ سے حاصل ہونے والی نئی تصاویر میں شمالی کوریا کے تجرباتی مقام پنگئی ری میں دو نئی سرنگوں کے داخلے راستے اور دیگر تعمیراتی کام دیکھا گیا۔

بدھ کو انسٹیٹیوٹ کے بلاگ '38 نارتھ' میں کہا گیا کہ اس بات کی نشاندہی نہیں ہوئی کہ جوہری تجربہ جلد ہی کیا جانے والا ہے۔

تاہم اس میں متنبہ کیا گیا کہ جاری تعمیراتی کام سے " ظاہر ہوتا ہے کہ شمالی کوریا مستقبل میں اپنے جوہری پروگرام کے تحت کوئی نیا تجربہ کرنے کی تیاری کررہا ہے۔"

شمالی کوریا نے 2006، 2009 اور رواں سال فروری میں زیر زمین جوہری تجربات کیے جس پر اسے امریکہ سمیت عالمی سطح پر پابندیوں کا سامنا بھی کرنا پڑا۔

پیانگ یانگ امریکہ اور جنوبی کوریا کو خطرہ تصور کرتے ہوئے اپنا میزائل اور ایٹمی پروگرام جاری رکھنے کا عزم ظاہر کرچکا ہے۔

لیکن ساتھ ہی ساتھ شمالی کوریا کا یہ بھی کہنا ہے کہ وہ پیشگی شرائط کے بغیر چھ ملکی جوہری مذاکرات کی بحالی پر تیار ہے۔ امریکہ کا کہنا ہے کہ پیانگ یانگ اس سے قبل اپنا جوہری پروگرام ترک کرنے کے پرانے وعدوں کی پاسداری کرے۔
XS
SM
MD
LG