رسائی کے لنکس

شمالی کوریا کے فوری حملے کا امکان نہیں : امریکی کمانڈر


بحرالکاہل میں امریکی بحریہ کے کمانڈر کا کہناہے کہ جنوبی کوریا کا ایک جنگی جہاز ڈوبے کے بعد پیدا ہونے والی کشیدگی کے باوجودانہیں ایسے کوئی آثار دکھائی نہیں دیے کہ شمالی کوریا، اپنے پڑوسی ملک جنوبی کوریا پر حملے کی منصوبہ بندی کررہاہے۔

جمعے کے روز سنگاپور میں سیکیورٹی سے متعلق کانفرنس میں شرکت کے لیے آئے ہوئے امریکی ایڈمرل رابرٹ وائلڈر نے کہا کہ انہوں نے اپنی فورسز کو بطور خاص چوکس رہنے کی ہدایات دی ہیں، لیکن ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے سرحد کے ساتھ شمالی کوریا کے فوجیوں کا بھاری اجتماع یا اسے کسی جوہری تجربے کی تیاریاں کرتے ہوئے نہیں دیکھا۔

شمالی کوریا نے جمعے کے روز دھمکی دی کہ اگرجنوبی کوریا کے بحری جہاز کو تارپیڈو کے ذریعے ڈبونے کامعاملہ اقوام متحدہ کی سیکیورٹی کونسل کے سامنے لایا گیا تووہ سخت ترین ردعمل ظاہر کرے گا۔

پیانگ یانگ کئی بار جنگی بحری جہاز چیونن پر حملے میں اپنے ملوث ہونے کی تردید کرچکاہے۔ اس واقعہ میں جنوبی کوریا کے 46 فوجی ہلاک ہوگئے تھے۔

جمعے کی شام جنوبی کوریا کے صدر لی میونگ باک ، سنگاپور میں ایک کانفرنس سے خطاب کریں گے، جس میں توقع ہے کہ وہ شمالی کوریا کے خلاف بین الاقوامی کارروائی کی اپنی اپیل کا اعادہ کریں گے۔

دونوں کوریاؤں نے 1953ء میں ایک عارضی صلح پر ایک معاہدے پر دستخط کیے تھے لیکن ٹیکنیکی لحاظ سے وہ مسلسل حالت جنگ میں ہیں۔



XS
SM
MD
LG