رسائی کے لنکس

جنوبی کوریا کے چھ شہریوں کو واپس کر دیں گے: شمالی کوریا


سیئول کی وزارت ’یونیفکیشن‘ کے مطابق اُسے شمالی کوریا کی طرف سے بتایا گیا ہے کہ ان افراد کو جمعہ کو سرحدی گاؤں پینمنجام کے راستے جنوبی کوریا میں بھیجا جائے گا۔

شمالی کوریا نے پڑوسی ملک جنوبی کوریا کو آگاہ کیا ہے کہ وہ اس کے چھ شہریوں کو دونوں ممالک کو ملانے والی سرحد کے راستے واپس کر دے گا۔

اس سرحد پر دونوں ملکوں کی افواج تعینات ہیں۔

سیئول کی وزارت ’یونیفکیشن‘ کے مطابق اُسے شمالی کوریا کی طرف سے بتایا گیا ہے کہ ان افراد کو جمعہ کو سرحدی گاؤں پینمنجام کے راستے جنوبی کوریا میں بھیجا جائے گا۔

ان افراد کی شناخت کے بارے میں کچھ نہیں بتایا گیا تاہم سیئول کے مطابق وہ ان افراد کو قبول کرنے کا ارادہ رکھتا ہے۔

جنوبی کوریا کی وزارت کے مطابق اُسے ان چھ افراد کی شناخت کے بارے میں علم نہیں لیکن رہا کیے جانے والے افراد میں اس کے وہ چار شہری بھی ہو سکتے ہیں جنھیں 2010ء میں شمال میں غیر قانونی طور پر داخل ہونے پر گرفتار کیا گیا تھا۔

سیئول کے مطابق اس سے قبل پیانگ یانگ ان چار افراد سے متعلق معلومات حاصل کرنے کی درخواستوں کو رد کرتا آیا ہے۔

جنوبی کوریا کے شہریوں کے لیے حکومت کی اجازت کے بغیر شمالی کوریا جانا غیر قانونی عمل ہے۔

رواں سال کے اوائل میں شمالی اور جنوبی کوریا کے تعلقات انتہائی کشیدہ ہو گئے تھے اور اس تناؤ کا آغاز عالمی برادری کے انتباہ کے باوجود پیانگ یانگ کی طرف سے تیسرے جوہری تجربے کے بعد ہوا۔

لیکن دونوں ملکوں کے تعلقات میں حالیہ مہینوں میں قدرے بہتری آئی ہے اور شمالی و جنوبی کوریا نے کئی ماہ تک بند رہنے والے مشترکہ صنعتی مرکز کو بھی بحال کیا۔
XS
SM
MD
LG