رسائی کے لنکس

شمالی وزیرستان: ڈرون حملے میں چار ہلاک


فائل فوٹو

فائل فوٹو

اطلاعات کے مطابق بغیر ہواباز کے طیارے نے پیر کو شمالی وزیرستان کی وادی میں ایک گاڑی پر دو میزائل فائر کیے۔

پاکستان کے قبائلی علاقے شمالی وزیرستان میں پیر کو ایک مشتبہ امریکی ڈرون حملے میں چار مبینہ شدت پسند ہلاک ہو گئے۔

اطلاعات کے مطابق بغیر ہواباز کے طیارے نے پیر کو شمالی وزیرستان کی وادی شوال میں ایک گاڑی پر دو میزائل فائر کیے جس سے کم از کم چار جنگجو ہلاک ہو گئے۔

مرنے والوں کی شناخت اور ان کی تعداد سے متعلق مصدقہ معلومات حاصل نہیں ہو سکی ہیں کیونکہ جس علاقے میں یہ حملہ ہوا وہاں ذرائع ابلاغ کی رسائی نہ ہونے کی وجہ سے ایسے واقعات کی آزاد ذرائع سے تصدیق تقریباً ناممکن ہے۔

پاکستان کی فوج نے گزشتہ سال جون میں شمالی وزیرستان میں ملکی و غیر ملکی شدت پسندوں کے خلاف آپریشن 'ضرب عضب' شروع کیا تھا۔

حکام اس میں اب تک سینکڑوں شدت پسندوں کو ہلاک کرنے کے علاوہ شمالی وزیرستان کے نوے فیصد علاقے کو دہشت گردوں سے پاک کرنے کا بتا چکے ہیں۔

شوال کا علاقہ زیادہ تر جنگلات سے ڈھکا ہوا ہے اور ایک مشکل علاقہ تصور کیا جاتا ہے اور یہاں پاکستانی فوج نے زمینی کارروائی بھی شروع کر رکھی ہے۔

حالیہ ہفتوں میں یہاں ایک بار پھر ڈرون حملوں کا سلسلہ دیکھا گیا جس کی پاکستان یہ کہہ کر مذمت کرتا آ رہا ہے کہ ایسی کارروائیاں اس کی جغرافیائی سالمیت اور بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی ہیں۔

پاکستان یہ کہہ چکا ہے کہ ڈرون حملوں کا شمالی وزیرستان میں جاری فوجی آپریشن سے کوئی تعلق نہیں۔

XS
SM
MD
LG