رسائی کے لنکس

جوہری ہتھیاروں کے تجربے کے خلاف جاپان کا بھارت کو انتباہ


جاپانی وزیر خارجہ (فائل فوٹو)

جاپانی وزیر خارجہ (فائل فوٹو)

جاپانی وزیرِ خارجہ کٹسویا اوکاڈا نے کہا ہےاگر بھارت جوہری ہتھیاروں کےتجربےکرتا ہےتو جاپان بھارت کےساتھ ہر طرح کا جوہری تعاون معطل کردے گا۔

اوکاڈا نے بھارتی دارلحکومت کے دورے میں ہفتے کو اپنے بھارتی ہم منصب ایس ایم کرشنا کےساتھ دوطرفہ اسٹریٹجک مذاکرات کیے۔ اُنھوں نے کہا کہ دونوں فریقوں نے قریبی معاشی اور سیاسی تعلقات پر بات چیت کی، جس میں مجوزہ سویلین جوہری سمجھوتا شامل ہے۔

اوکاڈا نے بھارتی عہدے داروں پر زور دیا کہ سمجھوتے میں تخفیفِ اسلحہ اور جوہری عدم پھیلاؤ کی شقیں شامل کرنے کے سلسلے میں کام کیا جائے جِس کے بعدہی جاپان بھارت کو نیوکلیئر پاور ٹیکنولوجی درآمد کرسکے گا۔

لیکن دوسری جنگِ عظیم کے دوران جاپان کےہیروشیما اور ناگاساکی شہروں میں امریکی ایٹمی بمباری میں زندہ بچ جانے والے افراد اِس سمجھوتے کی مخالفت کرتے ہیں۔

کرشنا نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ دونوں نے اِس بات پر اتفاق کیا کہ ایسے جوہری سمجھوتے کے لیے کوششیں تیز کی جائیں گی جودونوں فریقین کو قابلِ قبول ہو۔

بھارت نے ماضی میں جوہری عدم پھیلاؤ کے سمجھوتے پر دستخط نہیں کیے اور جوہری ہتھیاروں کے تجربات کیے ہیں۔

بھارت کے بعد، جاپانی وزیرِ خارجہ ابیشٹ وِجا جیوا اور اعلیٰ عہدے داروں سے بات چیت کے لیے تھائی لینڈ کا دورہ کریں گے ۔

XS
SM
MD
LG