رسائی کے لنکس

اُن کا کہنا تھا کہ گذشتہ 64 ماہ کے دوران نجی شعبے میں روزگار کے مواقع میں متواتر اضافہ ہوتا رہا ہے۔ بقول اُن کے، ’ابھی بہت سے لوگ ہیں جو یہ محسوس کرتے ہیں کہ کھیل کا میدان ہموار نہیں، جس کے باعث اُنھیں آگے بڑھنے میں دقت پیش آتی ہے‘

صدر براک اوباما نے کہا ہے کہ امریکہ میں روزگار کے مواقع کے بارے میں سامنے آنے والی تازہ رپورٹ ایک ’اچھی پیش رفت ہے‘۔ تاہم، لوگوں کو بہتر تنخواہ اور آمدن دلانے کے سلسلے میں کافی کچھ کیا جانا باقی ہے۔

صدر اوباما نے یہ کلمات جمعرات کے روز لوکرز کے شہر میں’ یونیورسٹی آف ونکونسن‘ کی ایک تقریب سے خطاب میں کہے۔

اُن کا کہنا تھا کہ گذشتہ 64 ماہ کے دوران نجی شعبے میں روزگار کے مواقع میں متواتر اضافہ ہوتا رہا ہے۔ بقول اُن کے، ’ابھی بہت سے لوگ ہیں جو یہ محسوس کرتے ہیں کہ کھیل کا میدان ہموار نہیں، جس کے باعث اُنھیں آگے بڑھنے میں دقت پیش آتی ہے‘۔

جمعرات کو جاری ہونے والی رپورٹ میں محکمہٴمحنت نے بتایا تھا کہ جون کے مہینے میں امریکہ میں روزگار کے 223000 مواقع پیدا ہوئے، اور بے روزگاری کی شرح میں نکتے کی دو دہائی کی شرح کی کمی واقع ہوئی۔ اور یوں، اب یہ 5.3 فی صد کی سطح پر ہے۔

سنہ 2008 کے بعد اب تک کی یہ بے روزگاری کی نچلی ترین شرح ہے۔ تاہم، اہل کاروں کا کہنا ہے کہ شرح فی صد میں اس لیے زیادہ اضافہ نظر نہیں آیا، کیونکہ اسی دوران 400000 سے زائد افراد نے روزگار تلاش کرنے کی اپنی کوششیں ترک کردیں، اور یوں، اُن کا شمار بے روزگاروں میں نہیں ہوتا۔

جمعرات کو امریکی محکمہٴمحنت کی جانب سے جاری کردہ اِس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ روزگار کے مواقع میں اضافہ کاروباری خدمات، صحت عامہ کی دیکھ بھال اور خردہ فروش تجارت کے شعبے میں آیا۔

معدنیات کے شعبے میں روزگار کے مواقع میں کمی کا رجحان جاری ہے، جس میں پیٹرولیم کی صنعت شامل ہے، جو گرتی ہوئی تیل کی قیمتوں کے باعث سخت متاثر ہوئی ہے۔

محکمہ محنت نے بتایا ہے کہ روزگار کے بغیر امریکیوں کے عدد میں 375000کی کمی ہوئی، اور یوں یہ عدد 83 لاکھ تک پہنچا۔

اس کے علاوہ، 65 لاکھ افراد کُل وقتی روزگار کے متلاشی ہیں، لیکن اُنھیں جز وقتی کام میسر ہے۔

وائٹ ہاؤس کے عہدے داروں کا کہنا ہے کہ گذشتہ برس کے دوران امریکی معیشت میں 29 لاکھ روزگار کے مواقع کا اضافہ ہوا؛ جب کہ گذشتہ پانچ سالوں کے دوران یہ تعداد ایک کروڑ 28لاکھ ہے۔

جمعرات کو اوباما نے بھی اس جانب توجہ دلائی کہ قابل برداشت صحت عامہ کی دیکھ بھال کی سہولت نے امریکی معیشت کو کچل نہیں دیا، جس کی پیش گوئی ریپبلیکن پارٹی کے ارکان نے کی تھی۔

صدر اوباما نے کہا کہ جو کاروباری مالکان اجرت اور تنخواہوں میں رقم ادا کرتے ہیں اُس میں اب تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے، جب کہ اِس کے مقابلے میں صحت کی دیکھ بھال پر اٹھنے والی لاگت میں کمی واقع ہوئی ہے۔ بقول اُن کے، ایسا سنہ 1990کی دہائی کے بعد پہلی بار ہوا ہے۔

اوباما نے کہا کہ اُنہیں یاد ہے کہ ریپبلیکن نمائندے کہا کرتے تھے کہ اوباماکیئر کی وجہ سے روزگار کے مواقع ختم ہوجائیں گے، آزادی صلب ہوگی اور نیم حکیموں کی موج ہوگی۔

اُنھوں نے کہا کہ اب فرق یہ آیا ہے کہ امریکہ کے یوم آزادی، چار جولائی کے موقع پر خوشیاں منانے والوں میں ایک کروڑ 60 لاکھ مزید امریکی شامل ہوں گے، جنھیں صحت کی نگہداشت کی سہولت میسر ہے۔ صدر نے کہا کہ ملک مستحکم و سلامت ہے۔

XS
SM
MD
LG