رسائی کے لنکس

امریکی مسلمان مختلف شعبوں میں نمایاں کام انجام دے رہے ہیں: اوباما


فائل

فائل

اس موقع پر، امریکی صدر نے داعش اور دیگر گروہوں کا مقابلہ جاری رکھنے کی ضرورت پر زور دیا، جو بظاہر اسلام کے نام پر، تشدد کی اذیت ناک سرگرمیوں میں ملوث ہیں: ترجمان وائٹ ہاؤس

امریکہ کے مختلف شعبہ جات میں مسلمان برادری کے نمایاں کام کو سراہتے ہوئے، صدر براک اوباما نے کہا ہے کہ نفرت کے زمرے میں آنے والے جرائم پر مقدمات قائم کرکے اور قانون کے نفاذ کے مؤثر اقدام لے کر، شہری حقوق کے تحفظ کو یقینی بنایا جا سکتا ہے۔

صدر نے یہ بات بدھ کی شام امریکی مسلمان رہنماؤں سے ہونے والی ملاقات میں کہی، جس میں وسیع تر داخلی اور خارجہ پالیسی امور پر گفتگو ہوئی۔

صدر اوباما نے مختلف شعبہائے زندگی میں شرکاٴکے نمایاں کام اور اپنی برادریوں سے متعلق اہم معاملات پر اپنے خیالات پیش کرنے کے لیے اکٹھے تشریف لانے پر امریکی مسلمان راہنماؤں کا شکریہ ادا کیا۔

اُنھوں نے اِس بات کی طرف دھیان مبذول کرایا کہ اُن کی جانب سے مختلف مذاہب سے تعلق رکھنے والی کمیونٹیز سے باقاعدہ بات چیت کا عمل اُن کے لیے قابلِ قدر بصیرت اور فیڈبیک کا ذریعہ بنتا ہے۔

وائٹ ہاؤس پریس سکریٹری، جوش ارنیسٹ کے مطابق، ملاقات کے دوران جن موضوعات پر گفتگو ہوئی اُن میں ’افرڈایبل کیئر ایکٹ‘، مسلمان مخالف تشدد اور امتیاز، اکیسویں صدی کی ’پولیسنگ ٹاسک فورس‘، اور پُرتشدد انتہا پسندی کے انسداد پر آئندہ دِنوں کے دوران منعقد ہونے والے سربراہ اجلاس، جن وسیع تر داخلی معاملات میں مسلمان برادری اپنی سی کاوشیں کرتی ہے اور انتظامیہ کے ساتھ ساجھے داری میں شریک ہے۔

صدر اوباما نےاپنی انتظامیہ کی طرف سے اِس عزم کا اعادہ کیا کہ نفرت کے زمرے میں آنے والے جرائم پر مقدمات قائم کرکے اور قانون کے نفاذ کو یقینی بنانے کے اقدام لے کر، شہری حقوق کا تحفظ کیا جائے گا۔

امریکی صدر نے داعش اور دیگر گروہوں کا مقابلہ جاری رکھنے کی ضرورت پر زور دیا، جو بظاہر اسلام کے نام پر، تشدد کی اذیت ناک سرگرمیوں میں ملوث ہیں۔

مسلمان امریکیوں کی جانب سے ملک کے لیے انجام دیے جانے والے نمایاں کام کا ذکر کرتے ہوئے، صدر نے اس بات کی حوصلہ افزائی کی کہ وہ اپنی کمیونٹیوں میں خیالات کے تبادلے اور اقدار کی سطح پر کام کرتے رہیں، اور اُن سے کہا کہ وہ امید کرتے ہیں کہ آئندہ بھی بات چیت کے اضافی مواقع میسر آتے رہیں گے، تاکہ اِن معاملات اور دیگر اشوز پر گفتگو جاری رکھی جاسکے۔

XS
SM
MD
LG