رسائی کے لنکس

جنرل ڈینفورڈ امریکی میرینز کے سربراہ نامزد


(فائل)

(فائل)

جنرل ڈینفورڈ فروری 2013ء سے افغانستان میں خدمات انجام دے رہے تھے، اور اپنی نئی تعیناتی کی صورت میں وہ جنرل جیمز آموس کی جگہ یہ عہدہ سنبھالیں گے

صدر براک اوباما نے افغانستان میں تعینات بین الاقوامی اتحادی افواج کے امریکی کمانڈر جنرل جوزف ڈینفورڈ کو امریکی میرینز کا سربراہ نامزد کیا ہے۔

جنرل ڈینفورڈ فروری 2013ء سے افغانستان میں خدمات انجام دے رہے تھے اور اپنی نئی تعیناتی کی صورت میں وہ جنرل جیمز آموس کی جگہ یہ عہدہ سنبھالیں گے۔

پینٹا گون کے ترجمان کرنل اسٹیو وارن کا کہنا ہے کہ جنرل ڈینفورڈ افغانستان سے اتحادی افواج کے انخلا سے قبل مقامی سکیورٹی فورسز کی استعداد کار بڑھانے اور انھیں مستحکم کرنے میں کوشاں رہے ہیں اور تاحال یہ طے نہیں ہوا کہ وہ کب افغانستان سے منتقل ہوں گے۔

صدر اوباما نے گزشتہ ہفتے اعلان کیا تھا کہ امریکہ آئندہ سال کے آغاز تک افغانستان میں اپنی فوجوں کی تعداد 9800 کر دے گا اور 2016ء کے اواخر تک اس کی تمام افواج افغانستان سے واپس آجائیں گی۔

کرنل وارن نے صحافیوں کو بتایا کہ ’ہمارے پاس کوئی مخصوص وقت سامنے نہیں کہ وہ (جنرل ڈینفورڈ) کب یہ عہدہ چھوڑیں گے اور افغانستان میں ان کی جگہ کون سنبھالے گا۔‘

جنرل آموس نے اِس فیصلے کو سراہتے ہوئے کہا کہ ڈینفورڈ ’آج کی فوج کے قابل ترین، دانش مند اور مفکر مزاج کے مالک‘ سینئر عہدے دار ہیں۔
XS
SM
MD
LG