رسائی کے لنکس

پسنی: ریڈار پر مسلح افراد کاحملہ، محافظ ہلاک


فائل

فائل

واقعہ کی اطلاع ملتے ہی سکیورٹی فورسز کے دستے موقع پر پہنچے اور علاقے کو گھیرے میں لے کر حملہ آوروں کی تلاش کا کام شروع کردیا۔

پاکستان کے جنوب مغربی صوبے بلوچستان کے ساحلی ضلع گوادر کے علاقے پسنی میں فضائی ٹریفک کنٹرول کرنے والے ایک ریڈار کی تنصیب پر نامعلوم مسلح افراد نے حملہ کرکے کم از کم ایک محافظ کو ہلاک کردیا ہے۔

حکام کے مطابق حملہ آور فائرگ کے بعد وہاں سے فرار ہونےمیں کامیاب ہوگئے۔

گوادر کے ضلعی پولیس افسر پرویز خان نے 'وائس آف امریکہ' کو بتایا ہے کہ واقعہ کی اطلاع ملتے ہی سکیورٹی فورسز کے دستے فوری طور پر موقع پر پہنچ گئے تھے جنہوں نے علاقے کو گھیرے میں لے کر حملہ آوروں کی تلاش کا کام شروع کردیا تھا۔

فوری طور پر حملے کی وجوہات واضح نہیں ہوسکی ہیں اور نہ ہی کسی تنظیم نے واقعے کی ذمہ داری قبول کی ہے۔

خیال رہے کہ بلوچستان میں سرکاری تنصیبات اور اہلکاروں پر مسلح قوم پرست جنگجووں کے حملے معمول کی بات ہیں۔

اس سے قبل ہفتے کو ہی صوبائی دارالحکومت کوئٹہ میں ایک بم کے دھماکے میں ایک کم سن بچی ہلاک اور سیکیورٹی اہلکاروں سمیت 18 افراد زخمی ہوگئے تھے۔

پولیس حکام کے مطابق نیو سریاب کےعلاقے میں دیسی ساختہ بم ایک رکشے میں نصب کرکے ایک تھانے کے نزدیک کھڑا کیا گیا تھا۔

حکام کے بقول ریموٹ کنٹرول سے اس وقت دھماکا کیا گیا جب وہاں سے فرنٹیئر کور کی گاڑی گزررہی تھی۔ اس دھماکے کی ذمہ داری بلوچ ریپبلکن آرمی نامی تنظیم نے قبول کی ہے۔
XS
SM
MD
LG