رسائی کے لنکس

انتخابی ضابطہ اخلاق پر تحفظات کا اظہار


نئے الیکشن کمیشن کی تشکیل پر سیاسی جماعتوں کے اختلافات بدستوربرقرار

نئے الیکشن کمیشن کی تشکیل پر سیاسی جماعتوں کے اختلافات بدستوربرقرار

عوامی نیشنل پارٹی کے ترجمان سینیٹر زاہد خان نے بتایا کہ الیکشن کمیشن کو ان قواعد و ضوابط کے اجراء سے پہلے پارلیمنٹ سے اس کی منظوری حاصل کرنی چاہیئے تھی۔

حکمران اتحاد میں شامل عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی ترجمان سینیٹر زاہد خان نے الیکشن کمیشن کی جانب سے انتخابات کے لیے جاری کردہ ضابطہ اخلاق پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ پارلیمان سے منظوری کے بغیر سیاسی جماعتیں اس پر عمل درآمد کی پابند نہیں ہیں۔

الیکشن کمیشن نے بدھ کو آئندہ عام انتخابات کے لیے ایک ضابطہ اخلاق کی منظوری دی تھی جس میں امیدواروں یا سیاسی جماعتوں پر یہ پابندی عائد کی گئی ہے کہ وہ خواتین کو ووٹ ڈالنے سے روکنے کے کسی معاہدے کا حصہ نہیں بن سکتے۔

سیاسی جماعتوں کو یہ ہدایت بھی کی گئی ہے کہ وہ اپنی خواتین اراکین کی انتخابی عمل میں شمولیت کی حوصلہ افزائی کریں۔

کمیشن نے امیدواروں کو اپنے حلقے میں ترقیاتی منصوبوں کے اعلانات یا وعدوں اور مقامی انتظامیہ کی اجازت کے بغیر عوامی مقام پر پارٹی کا جھنڈا لگانے سے باز رہنے کی بھی ہدایت کی۔

زاہد خان نے جمرات کو وائس آف امریکہ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ الیکشن کمیشن کو ان قواعد و ضوابط کے اجراء سے پہلے پارلیمنٹ سے اس منظوری حاصل کرنی چاہیئے تھی۔

’’بدقسمتی سے ہمارے ہاں سارے ادارے اپنے اپنے طریقے سے سوچتے ہیں اور اپنے اپنے طرف سے قوانین نکالتے ہیں۔ یہ سفارشات ہمارے پاس بھیجتے اور ہم بحث کے بعد ان پر قانون سازی کرتے تاکہ ان کے ہاتھ مضبوط ہوتے اور کوئی ان کی خلاف ورزی نہ کرتا۔‘‘


ان کا کہنا تھا کہ ان کی جماعت اپنے کسی امیدوار کو اجازت نہیں دے گی کہ وہ کسی بھی طرح کے معاہدے کے ذریعے خواتین کو ووٹ ڈالنے سے روکنے کی کوشش کریں۔

’’ان پرانی رسومات کو ختم کرنا پڑے گا لیکن کچھ علاقے ایسے ہیں جہاں خطرات ہوتے ہیں تو ان حالات میں اگر لوگ خود باہر نہیں آتے تو ایسے میں کسی کو زبردستی نکال کر (ووٹ کے لیے) لے جانا بھی صیح بات نہیں ہے۔‘‘

پاکستان میں انتخابی عمل کی نگرانی کرنے والی غیر سرکاری تنظیموں کے مطابق گزشتہ انتخابات میں خیبر پختون خواہ خواتین کو ووٹ ڈالنے سے روکنے کے سب سے واقعات سامنے آئے اور اس صوبے میں عوامی نیشنل پارٹی برسراقتدار ہے۔
XS
SM
MD
LG