رسائی کے لنکس

”روایتی جنگ کے نتائج قابو سے باہرہوسکتے ہیں“


”روایتی جنگ کے نتائج قابو سے باہرہوسکتے ہیں“

”روایتی جنگ کے نتائج قابو سے باہرہوسکتے ہیں“

پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل اشفاق پرویز کیانی نے متنبہ کیا ہے کہ جوہری ہتھیاروں کی موجودگی میں علاقے میں فوجوں کی روایتی جنگ کی باتیں کرنے والے دراصل ایک خطرناک راہ پرگامزن ہیں جس کے نتائج ارادوں اور قابو سے باہر ہو سکتے ہیں۔

پاکستان کایہ انتباہ بھارتی فوج کے سربراہ دیپک کپور کے اس شائع شدہ بیان کے بعد سامنے آیا ہے جس میں انھوں نے انکشاف کیا تھا کہ بھارت بیک وقت پاکستان اور چین سے جنگ کی تیاری کر رہا ہے۔

جمعہ کو راولپنڈی میں فوج کے اعلیٰ کمانڈروں سے خطاب کرتے ہوئے جنرل کیانی نے کہا کہ جنوبی ایشیا اور اس سے باہر امن واستحکام کو یقینی بنانا پاکستان کی سکیورٹی سے متعلق پالیسی کا بنیادی نقطہ ہے۔

انھوں نے کہا کہ پاکستانی فوج ملک کو درپیش روایتی اور غیر روایتی خطرات سے مکمل طور پر آگاہ اور ان سے نمٹنے کے لیے تیار ہے۔ ہمسایہ ملک بھارت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے پاکستانی فوج کے سربراہ نے کہا کہ ان کا ملک بے مثال جدید ہتھیاروں کے حصول اور ایک جارحانہ فوجی حکمت عملی سے بے خبر نہیں۔

تاہم جنرل کیانی نے کہا کہ ایک ذمہ دار جوہری ریاست ہونے کے ناطے پاکستانی فوج حکومت کی وضع کردہ پالیسی کے تحت علاقے میں تحمل اوراستحکام کو فروغ دینے میں اپنے کردار ادا کرتی رہے گی۔

انھوں نے کہا کہ پاکستانی فوج ملک کو کسی بھی شکل میں درپیش خطرات سے نمٹنے اور ضرورت پڑنے پرجارحانہ عزائم کو شکست دینے کی صلاحیت کو برقرار رکھنے کی پالیسی پر قائم ہے۔

XS
SM
MD
LG