رسائی کے لنکس

پاکستان:افغان صدر کے الزامات بے محل اور بے بنیاد


وزارت خارجہ کے ترجمان معظم احمد خان (فائل فوٹو)

وزارت خارجہ کے ترجمان معظم احمد خان (فائل فوٹو)

پاکستان افغانستان کے ساتھ سنجیدہ اور ذمہ دارانہ مذاکرات کا خواہاں ہے مگر ذرائع ابلاغ کے ذریعے سفارت کاری سے گریز کرنے کی ضرورت ہے۔

پاکستان نے دو طرفہ مجوزہ اسٹریٹیجک معاہدے کو مشروط کرنے کے دعوؤں کو قطعاً ’’بے محل اور بے بنیاد‘‘ قرار دیا ہے۔

دفتر خارجہ کے پیر کو جاری کردہ بیان میں ترجمان نے واضح کیا ہے کہ پاکستان باہمی احترام اور باہمی مفاد کی بنیاد پر افغانستان کے ساتھ ہمسائیگی کے اچھے تعلقات استوار کرنے کا خواہاں ہے۔

’’پاکستان چاہے گا کہ افغانستان کے ساتھ سنجیدہ اور ذمہ دارانہ مذاکرات کیے جائیں۔ لیکن ذرائع ابلاغ کے ذریعے سفارت کاری سے گریز کرنے کی ضرورت ہے۔‘‘

ترجمان نے مزید کہا کہ مجوزہ اسٹریٹیجک معاہدے کی تجویز صدر کرزئی نے نیویارک میں سہہ فریقی سربراہ اجلاس میں دی تھی اور 29 ستمبر 2012 کو نیویارک سے ذرائع ابلاغ کو جاری کردہ بیان میں بھی اس کا اظہار کیا گیا تھا۔

افغان صدر کی جانب سے پاکستان پر افغانستان میں دہشت گردانہ حملوں کی حمایت کے الزامات کا حوالہ دیتے ہوئے ترجمان نے کہا کہ اُن کے ملک نے افغانستان میں استحکام کے فروغ کے لیے بھاری جانی و مالی قربانیاں دی ہیں۔
XS
SM
MD
LG