رسائی کے لنکس

پاکستان: بم دھماکے اور فضائی کارروائی میں 13 ہلاک


(فائل فوٹو)

(فائل فوٹو)

دھماکا شمالی وزیرستان میں ہوا جہاں ایک فوجی قافلے میں شامل گاڑی سڑک میں نصب بارودی سرنگ سے ٹکرا گئی۔

پاکستان کے شمال مغربی قبائلی خطے میں اتوار کو ایک بم دھماکے اور لڑاکا طیاروں کی عسکریت پسندوں کے مشتبہ ٹھکانوں پر بمباری میں تین فوجیوں سمیت کم از کم 13 افراد ہلاک ہو گئے۔

عسکری ذرائع نے بتایا کہ بم دھماکا شمالی وزیرستان میں ہوا جہاں میر علی قصبے سے اس سرحدی خطے کے انتظامی مرکز میران شاہ کی طرف سفر کرنے والے ایک فوجی قافلے میں شامل گاڑی سڑک میں نصب بارودی سرنگ سے ٹکرا گئی۔

طاقتور دھماکے میں تین فوجی ہلاک اور تین زخمی جب کہ گاڑی مکمل طور پر تباہ ہو گئی۔

افغان سرحد سے ملحقہ شمالی وزیرستان مقامی اور غیر ملکی جنگجوؤں کی آماج گاہ سمجھا جاتا ہے جہاں امریکی حکام کے بقول افغان جنگجوؤں کا حقانی نیٹ ورک سرحد پار افغانستان میں نیٹو افواج پر مہلک حملوں میں ملوث ہے۔

اُدھر ملحقہ اورکزئی ایجنسی نامی قبائلی علاقے میں مقامی انتظامیہ کے عہدے داروں نے کہا ہے کہ پاکستانی فضائیہ کے جیٹ طیاروں نے عسکریت پسندوں کے مشتبہ ٹھکانوں پربمباری کر کے کم ازکم 10 جنگجوؤں کو ہلاک اور اُن کے تین ٹھکانے تباہ کردیے۔ یہ کارروائی ماموزئی، ندر میلہ اور برمیل میں کی گئی۔

پاکستان حکام کے بقول اورکزئی میں 90 فیصد علاقے میں شدت پسندوں کا خاتمہ کیا جا چکا ہے تاہم بعض حصوں میں ان عناصر کی سرگرمیاں جاری ہیں۔
XS
SM
MD
LG