رسائی کے لنکس

عام انتخابات کی تیاریاں مکمل، پولنگ ہفتے کو ہوگی


آٹھ کروڑ 61 لاکھ سے زائد ووٹر، 7 لاکھ 20 ہزار سے زائد انتخابی عملہ اور 6 ارب روپے کے اخراجات سے ہونے والے یہ ملکی تاریخ کے مہنگے ترین انتخابات ہیں۔

پاکستان کے دسویں عام انتخابات کے لئے ووٹنگ 11مئی، یعنی ہفتے کو ہوگی۔ پولنگ مقامی وقت کے مطابق صبح8بجے سے شام 5بجے تک جاری رہے گی۔

اس دوران، تقریباً 8ساڑھے آٹھ کروڑ افراد اپنا حق رائے دہی استعمال کرسکیں گے۔ پولنگ قومی اور صوبائی اسمبلیوں کی 842 نشستوں کے لئے ہورہی ہے۔ ان نشستوں کے لئے ساڑھے 15 ہزار سے زائد امیدوار میدان میں ہیں۔

انتخابات وفاقی ادارے الیکشن کمیشن کی نگرانی میں ہو رہے ہیں۔ کمیشن کی جانب سے طے کردہ انتخابی قواعد و ضوابط کے تحت ووٹ کاسٹ کرنے کے لئے کمپیوٹرائزڈ شناختی کارڈ لازمی ہے، جبکہ پولنگ اسٹیشن کے اندر موبائل فون لے جانے پر پابندی لگادی گئی ہے۔

انتخابات کیلئے ملک بھر میں ساڑھے 69 ہزار سے زائد پریزائیڈنگ آفیسرز کو تین دن کے لئے کلاس ون مجسٹریٹ کے اختیارات دیئے گئے ہیں۔

8 کروڑ 61 لاکھ سے زائد ووٹرز، 7 لاکھ 20 ہزار سے زائد انتخابی عملہ اور6 ارب روپے کے اخراجات سے ہونے والے یہ ملکی تاریخ کے مہنگے ترین انتخابات ہیں ۔

قومی اور صوبائی اسمبلیوں کی کچھ نشستیں ایسی بھی ہیں جن پر امیدواروں کے انتقال کے سبب انتخابات نہیں ہورہے۔ ان میں این اے 254کراچی، این اے 83فیصل آباد ،پی پی 217خانیوال(6) بی ایس 64میرپور خاص سندھ اور پی پی32جھل مگسی بلوچستان وغیرہ کی نشست شامل ہے۔ ان نشستوں پر بعد میں پولنگ ہوگی۔

پولنگ میٹریل متعلقہ حلقوں تک پہنچا دیا گیا ہے، جبکہ انتخابی عملے نے جمعہ کی دوپہر سے ہی پولنگ اسٹیشنز کاانتظام سنبھال لیا ہے۔ تمام پریذائیڈنگ افسران کو رات پولنگ اسٹیشنز پر ہی قیام کرنے کا پابند بنایا گیا ہے۔

انتخابات کے دوران فول پروف سیکورٹی کی غرض سے فوج، رینجرز، پولیس، ایف سی، لیویز اور اسکاوٴٹس کی خدمات لی گئی ہیں۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق اسلام آباد میں قومی اسمبلی کی دو نشستوں کیلئے 77، پنجاب میں 148جنرل نشستوں کیلئے 2367،سندھ میں 61نشستوں کیلئے 1087، خیبر پختونخواہ میں 35نشستوں کیلئے 517، فاٹا میں 12نشستوں کیلئے 339اور بلوچستان میں14نشستوں کیلئے 284امیدواروں میں مقابلہ ہوگا۔ جبکہ، صوبائی اسمبلیوں میں پنجاب میں 297نشستوں پر5758، سندھ میں 130نشستوں پر 2809، خیبر پختو اہ میں 99نشستوں پر1438اور بلوچستان میں 51نشستوں پر 953امیدوار میدان میں ہیں۔

ملک بھر میں مرد ووٹرز کی تعداد 4کروڑ86لاکھ 13ہزار 963اور خواتین ووٹرز کی تعداد 3کروڑ 75لاکھ 48ہزار 676ہے۔ پولنگ عملے کی مجموعی تعداد 6لاکھ44ہزار 970افرادپر مشتعل ہے۔

یہ ملکی تاریخ کے پہلے انتخابات ہیں جن میں امیدوار ووٹرزکوپولنگ اسٹیشن تک لانے کے لیے اپنی جانب سے ٹرانسپورٹ کی سہولت فراہم نہیں کرسکیں گے۔ الیکشن کمیشن کی جانب سے ترتیب دیئے گئے ضابطہ اخلاق کے مطابق ایسا کرنے والا قانونی خلاف ورزی کا مرتکب ہوگا۔
XS
SM
MD
LG