رسائی کے لنکس

لاہور ہائی کورٹ نے سماجی رابطوں کی مقبول ویب سائیٹ” فیس بُک“ تک رسائی پر لگائی گئی پابندی ختم کرنے کا حکم جاری کیا ہے۔

عدالت عالیہ نے 19 مئی کو حکومت کو حکم دیا تھا کہ فیس بُک پر پیغمبراسلام کے خاکے بنانے کا توہین آمیز مقابلہ منعقد کیا جار رہا ہے اس لیے پاکستان میں انٹرنیٹ صارفین کی اس ویب سائیٹ تک رسائی پر 31 مئی تک پابندی عائد کردی جائے۔

پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی نے اس حکم پر عملدرآمد کرتے ہوئے ”فیس بُک“ تک رسائی پر بندش کے ساتھ ساتھ ویڈیو کا تبادلہ کرنے والی مقبول ویب سائیٹ ”یو ٹیوب“ پر بھی ملک میں پابندی لگا دی تھی ۔

تاہم چند رو ز بعد یو ٹیوب پر پابندی ختم کردی گئی اور پیر کو سرکاری وکیل کی طرف سے اس یقین دہانی کے بعد کہ مستقبل میں فیس بُک پر اسلام مخالف مواد کی اشاعت کی حوصلہ شکنی کی یقین دہانی کرائی گئی ہے لاہور ہائی کورٹ نے سماجی رابطوں کی اس ویب سائیٹ تک رسائی پر پابند ی ختم کرنے کا حکم جاری کیا ہے۔

ایک روز قبل بنگلادیش نے بھی قابل اعتراض مواد پر مشتمل صفحات کی موجودگی پر اعتراض کرتے ہوئے ملک میں فیس بُک پر عارضی پابندی لگانے کا اعلان کیا تھا۔

XS
SM
MD
LG