رسائی کے لنکس

پاکستان کے جوہری اثاثے اور مواد بالکل محفوظ ہیں: اعزاز چودھری

  • ندیم یعقوب

پاکستانی سیکرٹری خارجہ اعزاز چودھری۔فائل فوٹو

پاکستانی سیکرٹری خارجہ اعزاز چودھری۔فائل فوٹو

امریکہ میں پاکستان کے سفارتخانے میں صحافیوں کے سوالات کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پاکستان کے جوہری اثاثے اور پلانٹس نہ صرف محفوظ ہیں بلکہ دنیا بھی انہیں محفوظ سمجھتی ہے۔

پاکستان کے سیکرٹری خارجہ اعزاز احمد چودھری نے کہا ہے کہ پاکستان کے جوہری اثاثے اور مواد بالکل محفوظ ہیں اور انہیں کسی قسم کا کوئی خطرہ نہیں ہے۔

یہ بات انہوں نے جمعرات کو امریکی دارالحکومت واشنگٹن میں جوہری سلامتی کی سربراہی کانفرنس کے آغاز پر ایک میڈیا بریفنگ میں کہی۔

انہوں نے واضح کیا کہ بے شک وزیر اعظم نواز شریف کانفرنس میں شرکت نہیں کر رہے مگر ان کے معاون خصوصی طارق فاطمی کی قیادت میں وفد مختلف میٹنگز میں بھر پور طریقے سے پاکستان کے موقف کو پیش کرے گا۔

امریکہ میں پاکستان کے سفارتخانے میں صحافیوں کے سوالات کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پاکستان کے جوہری اثاثے اور پلانٹس نہ صرف محفوظ ہیں بلکہ دنیا بھی انہیں محفوظ سمجھتی ہے۔

انہوں نے کہا “دنیا میں جوہری مواد اور جوہری پلانٹس میں کئی حادثات اور واقعات رونما ہوئے ہیں مگر پاکستان میں ایسا کچھ نہیں ہوا۔”

پاکستان میں جوہری ہتھیاروں اور تنصیبات کی حفاظت کے لیے اٹھائے جانے والے اقدامات کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ان کی حفاظت پاکستان کی قومی ذمہ داری ہے اور نیشنل کمانڈ اتھارٹی اس حوالے سے انتظامات کا جائزہ لیتی رہتی ہے اور ضرورت کے مطابق اقدامات اٹھاتی ہے۔

“پاکستان اپنے پلانٹس اور اثاثوں کی سکیورٹی کو بہت سنجیدگی سے لیتا ہے اور کسی کو اس بارے میں کوئی تشویش نہیں ہونی چاہیے۔”

انہوں نے کہا کہ حال ہی میں پاکستان نے جوہری مواد کے تحفظ کے حوالے سے عالمی معاہدے کی توثیق کی ہے۔ اس کے علاوہ پاکستان اپنے 72 کسٹمز پوائنٹس پر "ریڈی ایشن مونیٹرز" نصب کر رہا ہے اور اس سلسلے میں کچھ مونیٹرز نے کام کرنا شروع کر دیا ہے۔

اعزاز چودھری نے واضح کیا کہ پاکستان کے ایٹمی اثاثے پاکستان کے دفاع کے لیے ہیں اور جنگ کو روکنے کے لیے ہیں۔

XS
SM
MD
LG