رسائی کے لنکس

مقدمہ قتل میں ملک اسحاق کی حراست میں دو ہفتوں کی توسیع


فائل فوٹو

فائل فوٹو

حکومت پاکستان ’لشکر جھنگوی‘ کو کالعدم تنظیم قرار دے چکی ہے جب کہ رواں برس امریکہ نے کالعدم تنظیم ’لشکر جھنگوی‘ کے رہنما ملک اسحاق کو ’مطلوبہ دہشت گردوں کی فہرست‘ میں شامل کر لیا تھا۔

پاکستان میں انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے کالعدم تنظیم ’لشکر جھنگوی‘ کے سرکردہ رہنما ملک اسحاق کو قتل کے ایک مقدمے میں دو ہفتوں کے لیے ’جوڈیشل ریمانڈ‘ پر بھیج دیا ہے۔

پنجاب حکومت کی طرف سے ملک اسحاق کی نظر بندی میں توسیع کی درخواست واپس لیے جانے کے بعد جمعرات کو یہ مدت ختم ہو رہی تھی۔

حکومت پاکستان ’لشکر جھنگوی‘ کو کالعدم تنظیم قرار دے چکی ہے جب کہ رواں برس امریکہ نے کالعدم تنظیم ’لشکر جھنگوی‘ کے رہنما ملک اسحاق کو ’مطلوبہ دہشت گردوں کی فہرست‘ میں شامل کر لیا تھا۔

ملک اسحاق سنہ 1997ء میں قائم کی گئی تنظیم ’لشکر جھنگوی‘ کے بانی رکن اور تنظیم کے سرگرم رہنما بھی ہیں۔

لشکر جھنگوی پر شیعہ مسلمانوں کو قتل کرنے کا الزام ہے۔

ملک اسحاق کو 1997ء میں گرفتار کیا گیا تھا اور 14 سال کی قید کے بعد 2011ء میں انھیں ضمانت پر رہا کیا گیا تھا۔​

XS
SM
MD
LG