رسائی کے لنکس

پاکستان: صحافیوں کا ایکسپریس نیوز کے کارکنوں کی ہلاکت کے خلاف احتجاج


فائل فوٹو

فائل فوٹو

صحافیوں کی ایک بین الاقوامی تنظیم کمیٹی ٹو پروٹیک جرنلسٹس ’سی پی جے‘ نے اپنے ایک بیان میں پاکستانی عہدیداروں سے کہا ہے کہ وہ ایکسپریس نیوز کے عملے پر ہونے والے حملے کی تحقیقات کریں۔

پاکستان کے نجی ٹی وی چینل ”ایکسپریس نیوز“ کی گاڑی پر نامعلوم افراد کی فائرنگ سے ادارے کے تین ملازمین کی ہلاکت کے خلاف ہفتہ کو ملک کے مختلف شہروں میں صحافیوں نے احتجاج کیا۔

ملک میں صحافیوں کی ایک نمائندہ تنظیم پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس ’پی ایف یو جے‘ نے احتجاج کی کال دی تھی۔

مختلف سیاسی جماعتوں کے نمائندوں اور وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار نے ایکسپریس نیوز کی گاڑی پر حملے کی شدید مذمت کی۔

جمعہ کی شب کراچی میں نارتھ ناظم آباد کے علاقے میں فائرنگ سے ایکسپریس نیوز کا ایک ڈرائیور، ٹیکنیشن اور سکیورٹی گارڈ ہلاک ہو گیا تھا۔ چینل کے مطابق اس حملے کی ذمہ داری کالعدم تحریک طالبان پاکستان نے قبول کی۔

ایکسپریس نیوز کے کراچی میں ایک دفتر پر اس سے قبل بھی دو مرتبہ فائرنگ اور کریکر حملے ہو چکے ہیں۔

صحافیوں کی ایک بین الاقوامی تنظیم کمیٹی ٹو پروٹیک جرنلسٹس ’سی پی جے‘ نے اپنے ایک بیان میں پاکستانی عہدیداروں سے کہا ہے کہ وہ ایکسپریس نیوز کے عملے پر ہونے والے حملے کی تحقیقات کریں۔

سی پی جے کے ایشیا پروگرام کوارڈینیٹر باب ڈیڈز نے ایک بیان میں اس واقعے کی شدید مذمت کی۔
XS
SM
MD
LG