رسائی کے لنکس

ٹانک میں مقامی امن کمیٹی کا رہنما فائرنگ سے ہلاک


فائل فوٹو

فائل فوٹو

ٹانک کے علاقے کوٹ اعظم میں پیش آیا جہاں گھات لگائے نامعلوم مسلح افراد نے مقامی امن کمیٹی کے سربراہ شیرپاؤ محسود پر فائرنگ کر دی۔

پاکستان کے شمال مغربی صوبہ خیبر پختونخواہ میں نامعلوم مسلح افراد نے فائرنگ کر کے امن کمیٹی کے ایک سربراہ کو ہلاک کر دیا جب کہ اس حملے میں دو رضاکار زخمی بھی ہوئے۔

منگل کو یہ واقعہ جنوبی ضلع ٹانک کے علاقے کوٹ اعظم میں پیش آیا جہاں گھات لگائے نامعلوم مسلح افراد نے مقامی امن کمیٹی کے سربراہ شیرپاؤ محسود پر فائرنگ کر دی۔

گولیاں لگنے سے شیرپاؤ محسود ہلاک ہوگئے جب کہ ان کے ساتھ موجود دو رضا کار زخمی ہو گئے، جنہیں اسپتال منتقل کر دیا گیا۔

جس علاقے میں یہ واقعہ پیش آیا وہ قبائلی علاقے جنوبی وزیرستان کے قریب ہی واقع ہے۔

تاحال کسی فرد یا گروہ نے اس واقعے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے لیکن ماضی میں بھی امن کمیٹیوں اور مقامی لشکروں پر مختلف شدت پسند جان لیوا حملے کرتے رہے ہیں۔

قبائلی علاقوں اور اس سے ملحقہ صوبہ خیبر پختونخواہ میں مقامی لوگوں نے حکومت کی حمایت سے مقامی لشکر اور امن کمیٹیاں قائم کر رکھی ہیں جن کا مقصد علاقے میں شدت پسندوں کی کارروائیوں کا مقابلہ کرنا ہے۔

XS
SM
MD
LG