رسائی کے لنکس

پاکستان: درمیانے فاصلے تک مار کرنے والے میزائل کا تجربہ


فائل فوٹو

فائل فوٹو

فوج کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کے موجودہ بیلسٹک میزائل کا یہ تجربہ میزائل ٹیکنالوجی کے موجودہ معیار اور تکنیکی پہلوؤں میں بہتری کا جائزہ لینے کے لیے کیا گیا ہے۔

پاکستان نے درمیانے فاصلے تک مار کرنے والے حتف چار ’شاہین ون‘ بیلسٹک میزائل کا تجربہ کیا ہے۔

پاکستانی فوج کے شعبہ تعلقات عامہ ’آئی ایس پی آر‘ سے بدھ کو جاری ہونے والے ایک بیان کے مطابق یہ میزائل 900 کلومیڑ تک اپنے ہدف کو نشانہ بنانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

بیان میں یہ نہیں بتایا گیا کہ جوہری اور روایتی ہتھیار اپنے ہدف تک لے جانے کی صلاحیت رکھنے والے اس میزائل کا تجربہ کس مقام پر کیا گیا۔

پاکستانی فوج کے اعلٰی عہدیدار اور ملک کے میزائل نظام سے وابستہ سائنسدان اس مقام پر موجود تھے جہاں سے میزائل کا تجربہ کیا گیا۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کے موجودہ بیلسٹک میزائل کا یہ تجربہ میزائل ٹیکنالوجی کے موجودہ معیار اور تکنیکی پہلوؤں میں بہتری کا جائزہ لینے کے لیے کیا گیا ہے۔

پاکستان کی طرف سے یہ تجربہ ایک ایسے وقت کیا گیا جب رواں ہفتے ہی بھارت نے دو ہزار کلومیٹر تک مار کرنے والے اپنے اگنی میزائل کا تجربہ کیا تھا۔

ماضی میں میزائل تجربات پاکستان اور اس کے پڑوسی ملک بھارت کے درمیان تناؤ کا باعث بنتے رہے ہیں لیکن دونوں ملکوں کے درمیان ایسے تجربات سے متعلق پیشگی اطلاع کا نظام وضع کیے جانے کے بعد سے یہ معمول کی کارروائی کی حیثیت اختیار کر گئے ہیں۔

پاکستانی عہدیدار یہ کہتے آئے ہیں کہ اس کا میزائل نظام ملکی دفاع کے لیے ہے۔
XS
SM
MD
LG