رسائی کے لنکس

پاکستان کا بیلسٹک میزائل کا کامیاب تجربہ


پاکستان کا بیلسٹک میزائل کا کامیاب تجربہ

پاکستان کا بیلسٹک میزائل کا کامیاب تجربہ

پاکستان نے منگل کو درمیانے فاصلے تک مار کرنے والے بیلسٹک میزائل حتف پانچ ”غوری“ کا کامیاب تجربہ کیا ہے۔

پاکستان کا بیلسٹک میزائل کا کامیاب تجربہ

پاکستان کا بیلسٹک میزائل کا کامیاب تجربہ

فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق یہ میزائل روایتی ہتھیاروں کے علاوہ جوہری ہتھیار لے جانے کی صلاحیت بھی رکھتا ہے اور 1,300 کلو میٹر کے فاصلے تک اپنے ہدف کو ٹھیک ٹھیک نشانہ بنا سکتا ہے۔

صدر آصف علی زرداری اور وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی نے پاکستان کی افواج اور میزائل کی تیاری میں شامل دوسرے اداروں کو اس کامیاب تجربے پر مبارک باد دی ہے۔

بیلسٹک میزائل کے تجربے کے موقع پر منعقدہ تقریب میں وزیراعظم یوسف رضا گیلانی بھی موجود تھے اور اس موقع پر خطاب میں اُنھوں نے کہا کہ پاکستان ایک ذمہ دار ریاست ہے جس کے پاس انتہائی موثر اور معتبر ایٹمی دفاعی نظام موجود ہے جس کا مقصد کسی بھی جارحیت کے خلاف ملک کا دفاع کرنا ہے ”میں یہاں انتہائی وثوق سے کہہ سکتا ہوں کہ پاکستان کے ایٹمی ہتھیار نہایت محفوظ ہیں اور ہمارے پاس نہ صرف اپنے ایٹمی و سائل کو سنبھالنے اور کنٹرول کرنے کے مکمل اور بااعتماد ذرائع موجود ہیں بلکہ انہیں بوقت ضرورت استعمال کرنے کی صلاحیت بھی موجود ہے“۔

واضح رہے کہ وکی لیکس کے حالیہ انکشافات میں امریکی سفارت کاروں کے حوالے سامنے آنے والی خبروں میں پاکستان کے جوہری اثاثوں کے محفوظ ہونے کے بارے میں شکوک وشہبات کا اظہار کیا گیا تھا۔

پاکستان کے روایتی حریف بھارت نے رواں ماہ دور مار میزائل ”اگنی ٹو“ کی جدید تشکیل کا ناکام تجربہ کیا تھا۔ حکام کا کہنا تھا کہ یہ میزائل 2,500 کلومیٹر دور واقع ہدف کو نشانہ بنا سکتا ہے۔

جوہری صلاحیت کے حامل دونوں ملک وقتاً فوقتاً میزائلوں کے تجربات کرتے رہتے ہیں اور حکام کے مطابق اِن کے بارے میں پیشگی اطلاع فراہم کی جاتی ہے۔

XS
SM
MD
LG