رسائی کے لنکس

پرویز مشرف کے خلاف ’ٹھوس شواہد‘ ہیں: اٹارنی جنرل


فائل فوٹو

فائل فوٹو

منیر ملک نے بتایا کہ سیکرٹری داخلہ سابق فوجی صدر کی گرفتاری کے لیے حکومت کی تشکیل کردہ تین رکنی خصوصی عدالت کے سامنے درخواست بھی دائر کریں گے۔

پاکستان کے اٹارنی جنرل منیر اے ملک نے بدھ کو کہا کہ سابق فوجی صدر پرویز مشرف کو غداری کے مقدمے میں سزا دلوانے کے لیے حکومت کے پاس ’کافی ٹھوس شواہد‘ موجود ہیں۔

سپریم کورٹ میں صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو میں ان کا کہنا تھا کہ پرویز مشرف کے خلاف زیادہ تر شہادتیں پہلے ہی ریکارڈ پر ہیں اس لیے منیر اے ملک کے بقول یہ مقدمہ زیادہ طوالت کا شکار نہیں ہو گا۔

انھوں بتایا کہ سیکرٹری داخلہ سابق فوجی صدر کی گرفتاری کے لیے حکومت کی تشکیل کردہ
تین رکنی خصوصی عدالت کے سامنے درخواست بھی دائر کریں گے۔

سابق فوج کے سربراہ پر الزام ہے کہ انھوں نے 2007ء میں آئین کو معطل کرکے ملک میں ایمرجنسی نافذ کرنے کے ساتھ ساتھ سپریم کورٹ سمیت اعلیٰ عدلیہ کے ساٹھ ججوں کی نظر بندی کے احکامات جاری کیے تھے۔
XS
SM
MD
LG