رسائی کے لنکس

صدر ممنون حسین کے دورے سے پاکستان اور چین کے درمیان سیاسی، معاشی اور تزویراتی (اسٹریٹیجک) سمیت تمام شعبوں میں تعقات کو مزید فروغ ملے گا۔

پاکستان کے صدر ممنون حسین چین کے چار روزہ سرکاری دورے پر منگل کو بیجنگ پہنچے ہیں۔

انھیں اس دورے کی دعوت چینی صدر شی جنپنگ نے دی تھی۔ چین میں اپنے قیام کے دوران صدر ممنون حسین جنگ عظیم دوئم کے ستر سال مکمل پر منعقدہ ایک تقریب میں شرکت کریں گے۔

پاکستان کے دفتر خارجہ کے بیان کے مطابق اس دورے میں پاکستانی صدر اپنے چینی ہم منصب کے علاوہ دیگر اعلیٰ عہدیداروں سے بھی ملاقاتیں کریں گے جن میں دوطرفہ دلچسپی کے علاقائی اور بین الاقوامی امور پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

بیان کے مطابق اس طرح کے اعلیٰ سطحی دورے دونوں ملکوں کی دوستی اور وسیع تعاون کے عکاس ہیں۔

چین کے صدر شی جنپنگ نے بھی رواں سال اپریل میں پاکستان کا دورہ کیا تھا جس میں دونوں ملکوں کے درمیان متعدد شعبوں خصوصاً اربوں ڈالر کے پاک چین اقتصادی راہداری کے منصوبے پر دستخط کیے گئے تھے۔

چین پاکستان میں بڑے پیمانے پر سرمایہ کاری بھی کر رہا ہے جب کہ مختلف شعبوں خصوصاً بجلی کی پیداوار بھی دونوں ملکوں کے درمیان وسیع پیمانے پر تعاون جاری ہے جن میں ایٹمی توانائی سے بجلی پیدا کرنے کے منصوبے بھی شامل ہیں۔

سرکاری ذرائع ابلاغ کے مطابق صدر ممنون حسین کے دورے سے پاکستان اور چین کے درمیان سیاسی، معاشی اور تزویراتی (اسٹریٹیجک) سمیت تمام شعبوں میں تعقات کو مزید فروغ ملے گا۔

دوسری جنگ عظیم کے خاتمے کی یادگاری پریڈ بیجنگ میں منعقد ہو رہی ہے جس میں دنیا کے مختلف ملکوں کے سربراہان اور اعلیٰ حکومتی شخصیات شرکت کر رہی ہیں۔

دنیا کے متعدد ملکوں کے فوجی دستے بھی اس موقع پر ہونے والی پریڈ میں شریک ہوں گے اور سرکاری ذرائع ابلاغ کے مطابق پاکستان فوج کا ایک 75 رکنی دستہ بھی اس میں حصہ لے رہا ہے۔

XS
SM
MD
LG