رسائی کے لنکس

آلودگی سے پاک توانائی کے شعبے میں پاکستان امریکہ تعاون


فائل فوٹو

فائل فوٹو

امریکہ پاکستان کے ساتھ مل کر ایسی اصلاحات متعارف کرانے کے لیے کام کرے گا جس سے پاکستانی اور بین الاقوامی نجی شعبے اور سرمایہ کاروں کو آئندہ تین سے پانچ برسوں کے دوران پاکستان کی قومی گرڈ میں تین ہزار میگا واٹس فراہم کرنے میں مدد ملے گی۔

امریکہ نے پاکستان کو درپیش توانائی کے بحران سے نمٹنے کے لیےآلودگی سے پاک صاف توانائی کے منصوبوں میں نجی شعبے کو سہولت فراہم کرنے اور اس کی سرمایہ کاری بڑھانے کے منصوبے پر اتفاق کیا ہے۔

اس اقدام سے امریکہ پاکستان کے ساتھ مل کر ایسی اصلاحات متعارف کرانے کے لیے کام کرے گا جس سے پاکستانی اور بین الاقوامی نجی شعبے اور سرمایہ کاروں کو آئندہ تین سے پانچ برسوں کے دوران پاکستان کے قومی گرڈ میں تین ہزار میگا واٹس فراہم کرنے میں مدد ملے گی۔

امریکی محکمہ خارجہ کے خصوصی ایلچی برائے توانائی آموس ہوکسٹین نے رواں ہفتے پاکستان کا دورہ کیا جس کے دوران اُنھوں نے متعلقہ حکام سے توانائی کے شعبے میں تعاون کو بڑھانے پر مذاکرات کیے۔

اُنھوں نے پاکستان امریکہ اسٹریٹیجک مذاکرات کے وسیع تر فریم ورک کے تحت جاری دوسرے پاک-امریکہ انرجی ورکنگ گروپ کے اجلاس کے دوران کہا کہ آلودگی سے پاک توانائی پروگرام پاکستان میں توانائی کے چیلنجوں سے نمٹنے میں مدد دے گا۔

آموس ہوکسٹین، نائب سفیر ٹام ولیمز اور واشنگٹن سے آنے والے اعلیٰ سطح کے وفد نے صاف توانائی کے شعبے میں تعاون کو فروغ دینے کے لیے وفاقی وزراء شاہد خاقان عباسی، خواجہ آصف اور متعدد دیگر پاکستانی عہدیداروں سے بات چیت کی۔

امریکی سفارت خانے سے جاری ایک بیان میں کہا گیا کہ پاکستان میں 2020ء تک توانائی کی طلب دگنی ہونے کی توقع ہے۔ اس چیلنج سے عہدہ برآ ہونے کے لیے حکومت پاکستان کی طرف سے اصلاحات جیسے اہم اقدامات کی ضرورت ہے جن سے نجی شعبے اور بہت سے ملکوں اور اداروں کی جانب سے اعانت فراہم کرنے کے لیے گنجائش پیدا کی جا سکے۔

بیان کے مطابق آلودگی سے پاک توانائی میں پن بجلی، پون بجلی، شمسی ، حیاتیاتی مواد اور قدرتی گیس کے شعبے میں سرمایہ کاری سے توانائی کے تمام شعبوں کی صلاحیتوں میں اضافے کے لیے کوششوں سے پاکستان کا ایندھن کے بیرونی ذرائع پر انحصار ختم ہو جائے گا۔

ان اقدام سے موسمیاتی تغیرات کو روکنے میں بھی مدد ملے گی اور پاکستان کی توانائی کی قلت کا خاتمہ ہو سکے گا۔

یہ منصوبہ پاکستان کے لیے توانائی کے شعبے میں امریکی اعانت کے نئے دور کی علامت ہے جس کے دوران میں پاکستان کے قومی گرڈ میں 2010ء سے اب تک موجودہ پانی اور کوئلے سے چلنے والے بجلی گھروں کی مرمت، پن بجلی کے منصوبوں کی تکمیل اور پاکستان میں بجلی کی ترسیل و تقسیم کے نظام میں بہتری سے 1500 میگاواٹ بجلی کا اضافہ ہوا ہے۔

XS
SM
MD
LG