رسائی کے لنکس

صوبہ خیبر پختون خواہ میں سرکاری جامعات کھل گئیں


صوبہ خیبر پختون خواہ میں سرکاری جامعات کھل گئیں

صوبہ خیبر پختون خواہ میں سرکاری جامعات کھل گئیں

صوبہ خیبر پختون خواہ کی تمام سرکاری جامعات تقریباً تین ہفتے بند رہنے کے بعد جمعہ کو دوبارہ کھول دی گئی ہیں لیکن طالب علموں کی حاضری کم ہونے کے باعث اساتذہ نے بتایا ہے کہ تدرودریس کا باقاعدہ آغاز 29 نومبر سے ہوگا۔

اسلامیہ کالج یونیورسٹی کے مغوی وائس چانسلرپروفیسر اجمل خان کی عدم بازیابی کے خلاف صوبے کی سرکاری یونیورسٹیو ں کے وائس چانسلروں اور اساتذہ نے تمام جامعات بند کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔ تاہم رواں ہفتے جامعات کے سربراہوں کے اجلاس میں یونیورسٹیاں دوبارہ کھولنے کا فیصلہ کیا گیاتاکہ طالب علموں کی تعلیم کا حرج نہ ہو۔

صوبہ خیبر پختون خواہ میں سرکاری جامعات کھل گئیں

صوبہ خیبر پختون خواہ میں سرکاری جامعات کھل گئیں

پروفیسر اجمل کو ستمبر کے اوائل میں پشاور سے اغواء کیا گیا تھا ، وہ مرکز میں حکمران اتحاد میں شامل اور صوبے میں برسر اقتدار عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفند یار ولی کے قریبی عزیز ہیں ۔ اسفند یار ولی نے گذشتہ ہفتے ایک نیوز کانفرنس میں بتایا تھا کہ پروفیسر اجمل وزیرستان میں ہیں اور اُن کی رہائی کے لیے ہر ممکن کوششیں کی جارہی ہیں۔

مغوی وائس چانسلر کے اغواء کاروں نے پروفیسر اجمل کے دو ویڈیو پیغامات بھی جاری کیے ہیں جن میں اُنھوں نے حکومت سے کہا کہ اُن کی رہائی کے بدلے اغواء کاروں کے مطالبات مان لیے جائیں۔

XS
SM
MD
LG