رسائی کے لنکس

افواج کی ہر ضرورت کو پورا کریں گے: نواز شریف


فائل فوٹو

فائل فوٹو

وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ فرسودہ فلسفے اور قدیم حکمت عملی کے ساتھ کوئی معرکہ سر نہیں کیا جا سکتا۔اس بات کا احساس کرتے ہوئے، پاکستان کی دفاعی حکمت عملی ترتیب دی جارہی ہے

پاکستان کے وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ ملک کی مسلح افواج کی ہر ضرورت کو پورا کیا جائے گا اور بدلتے حالات کے تناظر میں ایک نئی دفاعی پالیسی ترتیب دی جا رہی ہے۔

بدھ کو کامرہ کے مقام پر فضائیہ کی ایک تنصیب میں اندرون ملک تیار کیے گئے پچاسویں جے ایف 17 تھنڈر طیارے کی باضابطہ طور پر ائیر فورس میں شمولیت کی تقریب سے وزیراعظم نے خطاب میں کہا کہ دور حاضر میں جنگ کی حکمت عملی میں انقلاب آ چکا ہے اور گزشتہ کئی سالوں میں ائیر فورس کی اہمیت میں غیر معمولی اضافہ ہوا ہے۔

’’اس میدان میں نئی نئی ایجادات اور تحقیق نے بھی صورتِ حال کو یکسر بدل دیا ہے۔اب ہزاروں میل دور بیٹھ کر اورکسی بڑی فوج کی غیر مو جودگی میں بھی میدانِ جنگ میں اترا جا سکتا ہے۔ یہ محض ائر فورس اور جدید ٹیکنالوجی کی وجہ سے ہے۔ پاکستان اس سے بے خبر نہیں ہے۔‘‘

اُنھوں نے کہا کہ پاکستان کی مسلح افواج کی قیاد ت بدلتے ہوئے حالات کا پورا ادراک رکھتی ہے اور ایک مشترکہ کمان کے تحت ایک مربوط حکمتِ عملی اختیار کیے ہوئے ہے۔

’’ ہمیں معلوم ہے کہ فرسودہ فلسفے اور قدیم حکمت ِ عملی کے ساتھ کوئی معرکہ سر نہیں کیا جا سکتا۔اس بات کا احساس کرتے ہوئے، پاکستان کی دفاعی حکمت عملی ترتیب دی جارہی ہے۔ مجھے خوشی ہے کہ پاکستان کی برّیِ ،بحری اورفضائی افواج کی قیاد ت ان تبدیل ہوتے ہوئے حالات کا پورا ادراک رکھتی ہے اور ایک مشترکہ کمان کے تحت ایک مربوط حکمتِ عملی اختیار کیے ہوئے ہے۔‘‘

وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ جے ایف 17 تھنڈر لڑاکا طیاروں کی اندرون ملک تیاری، خود کفالت اور صنعتی ترقی کی طرف پیش رفت کے ساتھ ساتھ پاکستان اور چین کے دوطرفہ تعلقات میں نئے باب کا اضافہ ہے۔

پاکستان اور چین کے اشتراک سے جے ایف 17 تھنڈر طیاروں کا منصوبہ نوے کی دہائی میں شروع کیا گیا اور بعد میں دونوں ملکوں کے تعاون سے اس لڑاکا جہاز کی تیاری پاکستان میں شروع کی گئی۔

وزیراعظم نے اس موقع پر چین کے تعاون سے شروع کیے گئے دیگر منصوبوں خاص طور پر گوادر بندرگاہ، چشمہ اور کراچی میں سول نیو کلیئر پاور پلانٹ کے منصوبوں کا بھی ذکر کیا۔

اُنھوں نے کہا کہ طیارہ سازی ہو یا ڈرون جیسی ٹیکنالوجی کا حصول، پاکستان کی فضائیہ کسی سے کم نہیں۔ وزیراعظم کا کہنا تھا کہ جے ایف 17 تھنڈر جہازوں کی صورت میں نہ پاکستان کا دفاع مضبوط ہوا ہے بلکہ اس کی وجہ سے ملک کی ہوا بازی کی صنعت کو ترقی ملی ہے۔
XS
SM
MD
LG