رسائی کے لنکس

پولینڈکے آنجہانی صدرکوخراجِ عقیدت، بیشمارلوگوں کی شرکت


ایک لاکھ لوگوں نے وارسا کے پِلسوکائی چوراہے پر جمع ہوکر اپنے آنجہانی صدر لیخ کیزائسکی کو خراجِ عقید ت پیش کرنے کی رسم میں شرکت کی، جس موقع پر سائرن اور گرجہ گھروں میں گھنٹیاں بجائی گئیں۔

آنجہانی کاجسدِ خاکی پولینڈ کے سرخ وسفید قومی جھنڈے اور کالے ربن میں لپٹا ہوا تھا۔

لیخ کیزانسکی ، ان کی اہلیہ اور ان 94 دوسرے افراد، جن میں متعدد اعلیٰ عہدے دار تھے، ہفتے کو رو س میں طیارے کے ایک حادثے میں ہلاک ہوگئے تھے۔

عبوری صدر برونسلا کوموروسکی نے مجمعے سے خطاب میں کہا کہ حادثے کی وجہ سے اُن کی دنیا تہس نہس ہو کر رہ گئی۔

اتوار کے روز کیزائسکی اور اُن کی اہلیہ کو سرکاری اعزازات کے ساتھ سپردِ خاک کیا جائے گا۔ اِس موقع پر درجنوں عالمی راہنماشرکت کا ارادہ رکھتے ہیں، لیکن چند لیڈروں نے راکھ کے بادلوں کے باعث، جس نے شمالی یورپ کے زیادہ تر علاقے کو اپنی لپیٹ میں لیا ہوا ہے، اپنا دورہ منسوخ کردیا ہے۔

کیزانسکی، دوسری جنگِ عظیم میں پولینڈ کے22000فوجی افسروں اور دیگر لوگوں کی سوویت روس کے ہاتھوں ہلاکت کی برسی کی مناسبت سے منعقد کی جانے والی یادگاردعائیہ تقریب میں شرکت کی غرض سے روس کے کاٹین جنگل علاقے کی طرف سفر کر رہے تھے، کہ یہ حادثہ پیش آیا۔

ہفتے کی صبح ملک بھر میں یونیورسل ٹائم کے حساب سے چھ بجکر 56 منٹ پر عین اُسی وقت جب روسی شہر سمولینسک میں طیارے کا حادثہ پیش آیا تھا ملک میں خاموشی اختیار کی گئی، سائرن اور چرچ کی گھنٹیاں بجائی گئیں ۔

صدر کازنسکی اور ان کے خاندان کا اصرا ر ہے کہ یہ تدفین اپنے مقررہ وقت پر ہو اگرچہ یہ خدشات موجود ہیں کہ آئس لینڈ میں آتش فشاں پہاڑ کے پھٹنے کے نتیجے میں فضا میں پھیلنے والے راکھ کے بادلوں کے باعث بہت سے راہنما اس تقریب میں شرکت نہیں کر سکیں گے ۔

XS
SM
MD
LG