رسائی کے لنکس

شمالی روس میں خودکش بم دھماکے میں مرنے والوں کی تعداد میں اضافہ


شمالی روس میں خودکش بم دھماکے میں مرنے والوں کی تعداد میں اضافہ

شمالی روس میں خودکش بم دھماکے میں مرنے والوں کی تعداد میں اضافہ

روس کے ایک شورش زدہ شمالی علاقے میں ایک روز قبل ہونے والے خودکش بم دھماکے میں مرنے والوں کی تعداد 17 ہو گئی ہے جن کی یاد میں جمعہ کوایک روزہ سوگ منایا گیا۔

روسی پولیس نے اوسیٹیا کے دارالحکومت ولادی کفکاز میں جمعرات کو ہونے والے اس حملے کی تحقیقات کے سلسلے میں تین مشتبہ افراد کو گرفتار کیا ہے ۔

سو سے زائد زخمی افراداب بھی مقامی ہسپتالوں میں زیر علاج ہیں جبکہ گیارہ شدید زخمیوں کو فضائی ایمبولینس کے ذریعے ماسکو کے ایک ہسپتال میں منتقل کر دیا گیاہے۔

روسی تحقیقاتی افسران کا کہنا ہے کہ خودکش بمبار نے کھلے میدان میں لگنے والے ایک بازار کے داخلی دروازے پر جسم سے بندھے 30 کلوگرام وزنی بم میں دھماکا کیا تھا اور ابھی تک کسی نے اس حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔

وزیر اعظم ولادی میر پوتن نے کہا ہے کہ اس طرح کے جرائم کا مقصد لوگوں کو لسانی فسادات پر اکسانا ہے جنہیں ہر حال میں روکنا ہوگا۔

شمالی اوسیٹیا صوبے میں اکثریت قدامت پسند عیسائیوں کی ہے جبکہ اس کے اردگر واقع چیچنیا ، انگشتیا اور دگستان مسلمان اکثریت والی ریاستیں ہیں۔

امریکی صدر باراک اوباما نے خودکش بم دھماکے میں ہلاک اور زخمی ہونے والوں کے ساتھ اظہار ہمدردی کیا ہے اور کہا ہے کہ اس حملے نے دہشت گردی کے خلاف مشترکہ کوششوں کے روس اور امریکہ کے عزم کو پختہ کیا ہے۔

XS
SM
MD
LG