رسائی کے لنکس

پراسیکوٹر جنرل آفس کی ویب سائیٹ پر پوسٹ کئے جانے والے ایک بیان میں الزام عائد کیا گیا ہے کہ ’این اِی ڈی‘ اپنی نگرانی میں روسی بزنس اور غیر تجارتی تنظیموں کو انتخابی نتائج کے لئے استعمال کررہی تھی، ’تاکہ حکومت کے فیصلوں پر اثرانداز ہوسکے اور روسی مسلح افواج کی خدمات کا اعتراف نہ ہو‘

روس نےامریکی کانگریس کی مالی معاونت سے کام کرنے والے واشنگٹن میں رجسٹرڈ ایک غیر سرکاری ادارے یا این جی او کو غیر ضروری قرار دیتے ہوئے اس پر پابندی عائد کردی ہے۔

روسی پراسیکوٹر جنرل کے حکم سے بند کی جانے والی یہ پہلی غیر ملکی این جی او ہے کہ جس پر روس کے نئے متنازعہ قانون کا اطلاق کیا گیا ہے۔

پراسیکوٹر جنرل آفس کی ویب سائیٹ پر پوسٹ کئے جانے والے ایک بیان میں الزام عائد کیا گیا ہے کہ ’این اِی ڈی‘ اپنی نگرانی میں روسی بزنس اور غیر تجارتی تنظیموں کو انتخابی نتائج کے لئے استعمال کررہی تھی تاکہ حکومت کے فیصلوں پر اثرانداز ہوسکے اور روسی مسلح افواج کی خدمات کا اعتراف نہ ہو۔

اس حوالے سے بات چیت میں پابندی کے بنیادی مقاصد کا اظہار کرتے ہوئے پراسیکوٹر جنرل نے کہا کہ وہ اس نتیجے پر پہنچا ہے کہ اس ’این جی او‘ کی موجودگی روسی آئین، اس کی دفاعی صلاحیتوں اور ریاستی سلامتی کے خلا ف ہے۔

روس میں 1983 میں قائم ہونے والی ’این اِی ڈی‘ نامی یہ این جی او 90 ممالک میں جمہوری مقاصد کے لئے کام کرنے والے این جی اوز کے سالانہ ہزاروں پروجیکٹس میں مالی مدد کرچکی ہے، جن میں ماسکو ہلسنکی گروپ سمیت انسانی حقوق اور سول سوسائٹی کے لئے کام کرنے والے کئی ایک این جی اوز شامل ہیں جن کے منصوبوں کی مالی مدد کی گئی۔

قبل ازیں، اسی مہینے روسی ایوان بالا فیڈریشن کونسل نے باضابطہ طور پر روسی محکمہٴ خارجہ، محکمہٴانصاف اور پروسیکوٹر جنرل آفس سے ’این اِی ڈی‘ سمیت 12 غیر ملکی این جی اوز کی سرگرمیوں کا جائزہ لینے کو کہا تھا، جس کے بعد ایک دوسری امریکی این جی او ’میکارتھر فاؤنڈیشن‘ نے ماسکو میں اپنا آفس بند کرنے کا اعلان کردیا تھا۔

XS
SM
MD
LG