رسائی کے لنکس

روس: حزب مخالف کے رہنما کی رہائی


الیکسی نیولنی

الیکسی نیولنی

نیولنی کو سنائی گئی سزا کے خلاف روس کے مختلف شہروں میں ہزاروں افراد نے مظاہرہ بھی کیا۔

روس کی ایک عدالت نے اپوزیشن رہنما ایلکسی نیولنی کو جمعہ کے روز رہا کرنے کا حکم دیتے ہوئے اُن کو خرد برد کے جرم میں سنائی گئی پانچ سالہ سزا پر اپیل کی سماعت ملتوی کر دی۔

عدالت کا کہنا تھا کہ نیولنی کو حراست میں رکھنے سے وہ آٹھ ستمبر کو ماسکو کے میئر کا انتخاب لڑنے سے محروم ہو جائیں گے۔

ملک کی ایک عدالت نے جمعرات کو اپنے فیصلے میں نیولنی کو پانچ سال قید کی سزا سنائی تھی۔ اُن پر الزام تھا کہ 2009 میں بطور صوبائی گورنر کے مشیر کے اُنھوں نے ایک سرکاری کمپنی کی پانچ لاکھ ڈالر مالیت کی لکڑی کا غبن کیا۔

نیولنی کو سنائی گئی سزا کے خلاف روس کے مختلف شہروں میں ہزاروں افراد نے مظاہرہ کیا۔

وائٹ ہاؤس نے جمعرات کو کہا تھا کہ اسے اس فیصلے سے ’‘مایوسی‘‘ ہوئی ہے۔

یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کی سربراہ کیتھرین ایشٹن نے ایلکسی کو سنائی گئی سزا پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ مقدمے کے دوران الزامات ثابت نہیں ہوئے تھے۔

37 سالہ نیولنی حکومت کی مبینہ بدعنوانی افشا کرتے رہے ہیں اور ان کا موقف ہے کہ اُن پر لگائے گئے الزامات در حقیقت اُنھیں خاموش کرانے کی کوشش ہیں۔

اُنھوں نے 2011ء میں انتخابات میں مبینہ دھاندلی کے خلاف بھی بڑے مظاہروں کی قیادت کی تھی۔
XS
SM
MD
LG