رسائی کے لنکس

کھلاڑیوں کے ممنوعہ ادویات کے استعمال کی تحقیقات کی جائیں گی: پوتن


کھلاڑی ماسکو میں اولمپک سینٹر میں تربیت حاصل کر رہے ہیں۔

کھلاڑی ماسکو میں اولمپک سینٹر میں تربیت حاصل کر رہے ہیں۔

ممنوعہ ادویات کے استعمال پر روس کو کھیل کے مقابلوں میں شرکت سے روکا جا سکتا ہے اور برازیل میں متوقع اگلے اولمپک مقابلوں میں اس پر پابندی عائد کی جا سکتی ہے۔

روس کے صدر ولادیمر پوتن نے کہا ہے کہ روس کو خود ان الزامات کی تحقیقات کرنی چاہئیں جن میں کہا گیا ہے کہ روس کے کھلاڑی باقاعدگی سے کارکردگی بڑھانے والی ممنوعہ ادویات استعمال کرتے رہے ہیں۔

ممنوعہ ادویات کے استعمال کے انسداد کے عالمی ادارے ورلڈ اینٹی ڈوپنگ ایجنسی نے پیر کو ایک رپورٹ جاری کی تھی جس میں روس پر الزام عائد کیا گیا تھا کہ وہ اپنے کھلاڑیوں کو ممنوعہ ادویات استعمال کرواتا ہے۔

ایجنسی نے رپورٹ آنے کے بعد ماسکو میں ادویات ٹیسٹ کرنے کی ایک لیباٹری کو چھ ماہ کے لیے کام کرنے سے روک دیا۔

رپورٹ میں لیبارٹری پر الزام عائد کیا گیا تھا کہ وہ کھلاڑیوں کے ٹیسٹ اس طریقے سے کرتی تھی کہ ان کے نتائج میں ممنوعہ ادویات کا استعمال ظاہر نہ ہو۔

صدر پوتن نے اس معاملے پر پہلی مرتبہ تبصرہ کیا ہے۔

پوتن کھیل کے عہدیداروں سے ملاقات کے لیے سوچی میں ہیں جہاں انہوں نے کہا کہ ’’میں اپنے کھیل کے وزیر اور کھیل سے متعلق اپنے تمام ساتھیوں سے کہوں گا کہ وہ اس مسئلے پر جتنا ممکن ہو توجہ دیں۔‘‘

پوتن نے اس عزم کا اظہار کیا کہ روس اس معاملے پر اپنی تحقیقات کرے گا اور ممنوعہ ادویات کے انسداد کے اداروں کے ساتھ تعاون کرے گا۔

خود کھلاڑی رہنے والے صدر پوتن نے یہ بھی کہا کہ ’’کھیل کا مقابلہ اسی وقت دلچسپ ہوتا ہے جب وہ ایماندارانہ ہو۔‘‘

انہوں نے کہا کہ اگر کہیں مسائل سامنے آئیں تو پھر کسی نہ کسی کو اس کی ذمہ داری قبول کرنی پڑے گی۔

ممنوعہ ادویات کے استعمال پر روس کو کھیل کے مقابلوں میں شرکت سے روکا جا سکتا ہے اور برازیل میں متوقع اگلے اولمپک کھیلوں میں اس پر پابندی عائد کی جا سکتی ہے۔

XS
SM
MD
LG