رسائی کے لنکس

روس: حکومت مخالف رہنما کی نظر بندی کا حکم


نیولنی اس وقت جیل میں ہیں جہاں وہ دارالحکومت ماسکو میں بغیر اجازت مظاہرہ کرنے کے الزام میں سیکڑوں دیگر مظاہرین کے ہمراہ سات دن قید کی سزا کاٹ رہے ہیں۔

روس کی ایک عدالت نے صدر ولادی میر پیوٹن کے کڑے ناقد اور حزبِ اختلاف کے رہنما الیگزے نیولنی کو دو ماہ تک نظر بند رکھنے کا حکم دیا ہے۔

وکلائے استغاثہ کا کہنا ہے کہ جناب نیولنی نے سفری پابندیوں کی خلاف ورزی کی ہے جو ان کے خلاف بدعنوانی کے الزام میں جاری تحقیقات کے سلسلے میں عائد کی گئی تھیں۔

وکلا نے بدھ کو عدالت سے نیولنی کو تحقیقات مکمل ہونے تک ان کی رہائش گاہ پر نظر بند رکھنے کی استدعا کی تھی۔

خیال رہے کہ جناب نیولنی اس وقت جیل میں ہیں جہاں وہ دارالحکومت ماسکو میں بغیر اجازت مظاہرہ کرنے کے الزام میں سیکڑوں دیگر مظاہرین کے ہمراہ سات دن قید کی سزا کاٹ رہے ہیں۔

اس سے قبل نیولنی کو ایک کمپنی سے پانچ لاکھ ڈالر چرانے کے الزام میں ایک عدالت نے گزشتہ برس جولائی میں پانچ سال قید کی سزا سنائی تھی۔ تاہم چند ماہ بعد ایک اعلیٰ عدالت نے نیولنی کی سزا معطل کرتے ہوئے انہیں رہا کردیا تھا۔

حکام کا کہنا ہے کہ حزبِ مخالف کے رہنما اور سرکاری کرپشن کے خلاف جدوجہد کرنے والے نیولنی اور ان کے بھائی کے خلاف اس وقت بھی 10 لاکھ ڈالر کی منی لانڈرنگ اور فراڈ کے الزامات میں تحقیقات جاری ہیں جس کے دوران ان پر سفری پابندیاں عائد کی گئی تھیں۔

نیولنی اپنے خلاف عائد تمام الزامات کی تردید کرتے ہیں اور ان کا الزام ہے کہ حکام پر تنقید کی پاداش میں پیوٹن حکومت ان کے خلاف انتقامی کاروائی کر رہی ہے۔
XS
SM
MD
LG