رسائی کے لنکس

نئے عالمی مالیاتی قوانین کے لیے سارکوزی کا مطالبہ


سارکوزی

سارکوزی

فرانس کے صدرنکولا سارکوزی نےامریکہ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ نئےعالمی مالیاتی قوانین تشکیل دینےمیں دوسروں کی قیادت کرے۔

مسٹرسارکوزی نے پیر کےروز نیو یارک میں ایک اجتماع سےخطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ مستقبل میں اقتصادی بحرانوں کی روک تھام کی خاطر امریکہ کو چاہئیے کہ وہ نئے ضوابط بنانے کے لیے یورپ کے ساتھ مل کر کام کرے۔

انہوں نے امریکہ سے کہا کہ وہ اس بارے میں غور کرے کہ دنیاکی اوّل نمبر کی طاقت ہونے کا مطلب کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ 21صدی میں کوئى ملک تنہا ساری دنیا کو نہیں چلا سکتا۔

مسٹر سارکوزی نے یہ تقریر وائٹ ہاؤس میں صدر براک اوباما کے ساتھ ملاقات سے ایک دن پہلے کی ہے۔

فرانسیسی لیڈر نے حال ہی میں امریکی کانگریس میں حفظانِ صحت کے نظام میں اُن اصلاحات کی منظور ی پر صدر اوباما کو مبارکباد دی ،جن کی بدولت توقع ہے کہ تین کروڑ سے زیادہ اُن امریکیوں کو ہیلتھ انشورینس حاصل ہوجائے گی جن کے پاس اس وقت یہ سہولت نہیں ہے۔ اُنہوں نے اُن ملکوں کے کلب میں امریکہ کو خوش آمدید کہا، جو اُن کے کہنے کے مطابق اپنے بیمار لوگوں کو بے یارو مددگار نہیں چھوڑ دیتے۔

مسٹر سار کوزی نے کہا کہ امریکہ میں جاری حفظانِ صحت پر بحث یورپ کے لوگوں کے لیے ناقابلِ یقین ہے۔ انہوں نے کہا کہ فرانس نے اس مسئلے کو 50 سال پہلے حل کرلیا تھا۔

توقع ہے کہ منگل کے روز وائٹ ہاؤس میں مسٹر سارکوزی اور مسٹر اوباما ایران، عالمی درجہ حرارت میں اضافے اور افغانستان کے بارے میں مذاکرات کریں گے۔ مسٹر سار کوزی نے پیر روز کولمبیا یونیورسٹی میں اپنی تقریر میں کہا ہے کہ فرانس، افغانستان میں بدستور امریکہ کا ساتھ دیتا رہے گا۔

امریکہ، فرانس پر زور دیتا رہا ہے کہ وہ افغانستان کو اپنی مزید فوجیں بھیجے۔

XS
SM
MD
LG