رسائی کے لنکس

سارک سربراہ کانفرنس میں خطے کو درپیش مسائل اجاگرکیے جائیں گے

  • ب

سارک سربراہ کانفرنس میں خطے کو درپیش مسائل اجاگرکیے جائیں گے

سارک سربراہ کانفرنس میں خطے کو درپیش مسائل اجاگرکیے جائیں گے

جنوبی ایشیاکے ملکوں پر مشتمل علاقائی تعاون کی تنظیم سارک کی دو روزہ سربراہ کانفرنس 28 اپریل سے بھوٹان میں شروع ہو گی۔ تنظیم میں شامل ملکوں میں بھارت، پاکستان، افغانستان، نیپال، سری لنکا، مالدیپ اور بنگلادیش ہیں ۔

بھوٹان میں ہونے والے سارک کے 16 ویں اجلاس میں مبصر ملکوں کے نمائندے بھی شرکت کریں گے جن میں امریکہ، چین، ایران، جاپان، جنوبی کوریا، ماریشس، میانمار، آسٹریلیا اور یورپی یونین شامل ہیں۔

پاکستانی دفتر خارجہ کی طرف سے جاری ہونے والے ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ سربراہ کانفرنس جنوبی ایشیا کو آلودگی سے پاک اور خوشحال بنانے کے لیے ایک قرارداد بھی منظور کی جائے گی جس سے ماحول اور موسمیاتی تبدیلی سے پیدا ہونے والے مسائل پر توجہ دی جائے گی۔

بیان کے مطابق اجلاس سے اپنے خطاب میں وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی جنوبی ایشیا میں غربت دور کرنے، توانائی کے شعبے میں تعاون، پانی، زراعت ودیہی ترقی اور علاقے کے لوگوں کو صحت کی بہتر سہولتیں فراہم کرنے جیسے مسائل کی اہمیت کو اُجاگر کریں گے۔

2008ء میں کولمبو میں ہونے والی سارک سربراہ کانفرنس میں پاکستان کی پہل پر ایک قرارداد منظور کی گئی تھی جس میں خطے کے لوگوں کے لیے خوراک کی فراہمی کو یقینی بنانے پر زور دیا گیا تھا۔ دفتر خارجہ کے بیان کے مطابق پاکستانی وزیر اعظم اجلاس میں اس معاملے کی اہمیت پر بھی اپنا موقف دہرائیں گے۔

وزیر اعظم اجلاس کے موقع پراس میں شرکت کرنے والوں ملکوں کے سربراہان کے ساتھ دوطرفہ ملاقاتیں بھی کریں گے۔

XS
SM
MD
LG