رسائی کے لنکس

ڈاکٹر ادیب رضوی نے بتایا کہ عبدالستار ایدھی کے دونوں گردے ناکارہ ہو چکے ہیں تاہم اُن کا کہنا تھا کہ ایدھی کو فی الحال علاج کے لیے بیرون ملک جانے کی ضرورت نہیں ہے

عالمی شہرت یافتہ سماجی شخصیت عبدالستار ایدھی ان دنوں شدید علیل ہیں گزشتہ ہفتے ان کی طبعیت بگڑ جانے کے باعث انھیں اسپتال میں داخل کرایاگیا، جہاں وہ ان دنوں زیر علاج ہیں۔

ڈاکٹروں کے مطابق ان کے دونوں گردوں نے کام کرنا بند کر دیا ہے۔

سندھ انسٹی ٹیوٹ آف یورولوجی اینڈ ٹرانسپلانٹ کراچی میں زیر علاج عبدالستار ایدھی نے منگل کے روز اسپتال کے سربراہ ڈاکٹر ادیب رضوی کے ہمراہ صحافیوں کو اپنی صحت سے آگاہ کیا۔

ڈاکٹر ادیب رضوی نے بتایا کہ عبدالستار ایدھی کے دونوں گردے ناکارہ ہو چکے ہیں تاہم اُن کا کہنا تھا کہ انھیں فی الحال علاج کے لیے بیرون ملک جانے کی ضرورت نہیں ہے اور نہ ہی ان کے گردے تبدیل کرنے کی ضرورت ہے، تاہم ایدھی صاحب کا تا حیات ڈائیلیسس کیا جائے گا۔

عبدالستار ایدھی نے صحافیوں سے گفتگو میں بتایا کہ اُنھوں نے اپنے تمام اعضاء عطیہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ڈاکٹر ادیب رضوی کا کہنا تھا کہ ستار ایدھی کی طرح اگر ہر انسان اپنے اعضاء عطیہ کردے تو اس سے کئی جانوں کو بچایا جا سکتا ہے۔

عبدالستار ایدھی پاکستان سمیت دنیا کے دیگر ممالک میں بھی سماجی و فلاحی خدمات انجام دیتے آئے ہیں۔

اُن کے ادارے ’ایدھی‘ کی خدمات کو نا صرف اندرون ملک بلکہ عالمی سطح پر سراہا گیا ہے۔

گزشتہ سال نوبل امن انعام کے لیے بھی عبدالستار ایدھی کو نامزد کیا گیا تھا۔

ایدھی کی ایمبولینس سروس ملک کی سب سے بڑی فلاحی ایمبولینس سروس ہے۔

تبصرے دکھائیں

XS
SM
MD
LG