رسائی کے لنکس

این جی اوز کے خلاف کارروائی پر امریکہ کا اظہار تشویش


رپورٹ کا اجرا (فائل)

رپورٹ کا اجرا (فائل)

محکمہ خارجہ کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ’سیو دی چیلڈرن‘ وہ ادارہ ہے جو گزشتہ 35 برس سے پاکستان میں صحت، تعلیم اور محفوظ خوراک کے شعبوں میں کام کررہا ہے؛ جو 40 لاکھ بچوں اور ان کے والدین تک اپنی خدمات فراہم کر چکا ہے

امریکہ نے پاکستان میں بین الااقوامی خیراتی اداروں اور این جی اوز کے خلاف کارروائی پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔

امریکی وزیر خارجہ جان کیری کی جانب سے جمعے کو جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ’سیو دی چیلڈرن‘ ان این جی اوز میں سے ایک ہے جو طویل عرصے سے انتہائی شفافیت کے ساتھ حکومت پاکستان کے ساتھ قریبی رابطہ میں رہتے ہوئے کام کر رہا ہے۔‘

بیان میں کہا گیا ہے کہ ’سیو دی چیلڈرن‘ وہ ادارہ ہے جو گزشتہ 35 برسوں سے پاکستان میں صحت، تعلیم اور محفوظ خوراک کے شعبوں میں کام کر رہا ہے؛ اور 40 لاکھ بچوں اور ان کے والدین تک اپنی خدمات فراہم کر چکا ہے۔

بیان کے مطابق، ’امریکہ محفوظ اور معاشی طور پر مستحکم جمہوری پاکستان کے قیام کے لئے حکومت کے ساتھ ہے۔ یہ بین الاقوامی غیر سرکاری ادارے جو پاکستان کے معاشی چیلنجوں کا سامنا کر رہے ہیں، انھیں امریکی حمایت حاصل ہے۔ یہ مختلف امور میں امریکہ کے عملدرآمدی حصہ دار کے طور پر کام کررہے ہیں۔‘

بیان میں کہا گیا ہے کہ، ’حال ہی میں ان میں سے کئی حصہ داروں نے پاکستان میں کام کے دوران اپنی مشکلات کا اظہار کیا تھا، جس کےحکومت پاکستان کی ترجیحات کے لئے ان حصہ داروں کی کوششوں پر واضح منفی اثرات مرتب ہوئے ہیں‘۔

بیان کے مطابق، ’پاکستان کے ان بین الاقوامی ترقیاتی حصہ داروں کو ملک میں سرگرمیوں کے دوران، شفافیت کے لئے حکومت پاکستان کی ضروریات کا احساس ہے۔ اور امریکہ یہ بھی تسلیم کرتا ہے کہ ان این جی اوز کو قانون کے دائرے میں رہتے ہوئے، اپنا کام کرنا چاہئے۔ اس مقصد کے لئے امریکہ نے حکومت پاکستان پر زور دیا ہے کہ وہ کوئی معیاری اصول و ضوابط مرتب کرے، تاکہ سیو دی چیلڈرن سمیت تمام این جی اوز اس قانونی دائر ے میں رہتے ہوئے کام کرسکیں‘۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ ’یہ این جی اوز مؤثر ترقی اور حکمرانی کے لئے عوام کے مفاد میں حکومت پاکستان کی مدد کے لئے بین الاقوامی ترقیاتی کمیونٹی کی کوششوں کا ایک اہم ترین حصہ ہیں‘۔

XS
SM
MD
LG