رسائی کے لنکس

سندھ میں سیلاب کی تباہ کاریاں جاری ، 132 ہلاک


سندھ میں سیلاب کی تباہ کاریاں جاری ، 132 ہلاک

سندھ میں سیلاب کی تباہ کاریاں جاری ، 132 ہلاک

پاکستان میں حکام نے کہا ہے کہ ملک کے جنوبی حصوں میں اس سال مون سون کی غیر معمولی بارشوں کے باعث سیلاب سے اب تک کم از کم 132 افراد ہلاک اور پچاس لاکھ افراد متاثر ہوچکے ہیں۔

سندھ میں سیلاب کی تباہ کاریاں جاری ، 132 ہلاک

سندھ میں سیلاب کی تباہ کاریاں جاری ، 132 ہلاک




آفات سے نمٹنے کے قومی ادارے ’این ڈی ایم اے‘ کے چیئرمین ظفر اقبال قادر نے پیر کو اسلام آباد میں نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ اس وقت صوبہ سندھ میں چالیس لاکھ ایکڑ سے زائد رقبہ زیر آب چکا ہے جب کہ 17 لاکھ ایکڑ پر کھڑی فصلیں بھی بری طرح متاثر ہوئی ہیں ۔ ” ساٹھ ہزار سے ایک لاکھ کے درمیان مال مویشی سیلابی ریلوں میں بہہ گئے جب کہ کپاس، گنا، سبزیوں ، گنے کی فصلیں تباہ ہو گئیں ۔ چھ لاکھ نوے ہزار مکانوں کو نقصان پہنچا۔“

اُنھوں نے بتایا کہ صوبہ سندھ میں متاثرین کی امداد کے لیے ہنگامی بنیادوں پر کارروائیاں جاری ہیں اور سیلاب زدہ علاقوں میں وبائی امراض بشمول ملیریا کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے بھی ضروری سامان اور ادویات فراہمی کو یقینی بنایا جا رہا ہے۔

اس سے قبل پاکستانی حکام نے شمال مغربی کوہستان ضلع میں شدید بارشوں کے دوران سیلابی ریلوں میں بہہ کر 66 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی تھی ۔

XS
SM
MD
LG