رسائی کے لنکس

سری لنکا میں جنگی جرائم سے متعلق نئےشواہد ملے ہیں: ہیومن رائٹس واچ


سری لنکا

سری لنکا

انسانی حقوق کی ایک تنظیم نے کہا ہے کہ انہیں سری لنکا میں تامل ٹائیگر باغیوں کے خلاف لڑائی کے آخری دنوں میں جنگی جرائم کے کچھ نئے ثبوت حاصل ہوئے ہیں۔

نیویارک میں قائم انسانی حقوق کی تنظیم ہیومن رائٹس واچ نے جمعے کے روز کہا کہ اس نےکئی عینی شاہدین کے انٹرویوز کیے ہیں اور پچھلے سال لڑائی کے دوران اگلے محاذوں پر سری لنکا کے فوجیوں کی کھینچی ہوئی 200 سے زیادہ تصاویر کا جائزہ لیا ہے ۔

تنظیم کا کہنا ہے کہ اس کے پاس یہ ثبوت موجود ہیں کہ سرکاری فورسز نے دانستہ طورپر شہریوں پر گولے برسائے تھے اور تامل ٹائیگرباغیوں نے بچوں کو لڑنے کے لیے بھرتی کیاتھا۔

تنظیم نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بن گی مون سے اپیل کی ہے کہ وہ اس لڑائی کے دوران دونوں فریقوں کی جانب سے کی جانے والی خلاف ورزیوں کی بین الاقوامی تحقیقات کرائیں۔

سری لنکا کی حکومت نے رپورٹ پر کسی ردعمل کا اظہار نہیں کیا لیکن وہ ماضی میں جنگی جرائم کے الزامات مسترد کرچکی ہے۔


XS
SM
MD
LG