رسائی کے لنکس

سری لنکا: صدر سری سینا کے بھائی قاتلانہ حملے میں ہلاک


پریانتھا سری سینا کی لاش اسپتال سے منتقل کی جارہی ہے۔

پریانتھا سری سینا کی لاش اسپتال سے منتقل کی جارہی ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ 42 سالہ پریانتھا دارالحکومت کے ایک نجی اسپتال میں زیرِ علاج تھے جہاں وہ ہفتے کی شب زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسے۔

قاتلانہ حملے میں زخمی ہونے والے سری لنکا کے صدر میتھری پالا سری سینا کے چھوٹے بھائی زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسے ہیں۔

حکام کے مطابق پریانتھا سری سینا پر جمعرات کو شمالی صوبے میں واقع ان کے آبائی قصبے پولو نارووا میں قاتلانہ حملہ ہوا تھا جس کے بعد انہیں علاج کے لیے ہیلی کاپٹر کے ذریعے دارالحکومت کولمبو منتقل کیا گیا تھا۔

حکام کا کہنا ہے کہ 42 سالہ پریانتھا دارالحکومت کے ایک نجی اسپتال میں زیرِ علاج تھے جہاں وہ ہفتے کی شب زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسے۔

پولیس حکام کے مطابق صدر کے بھائی کو ایک شخص نے ذاتی رنجش پر کلہاڑی سے حملہ کیا تھا جس میں انہیں جان لیوا زخم آئے تھے۔ قاتل نے بعد ازاں خود کو پولیس کے حوالے کردیا تھا تاہم حکام نے یہ نہیں بتایا کہ پریانتھا اور قاتل کے درمیان کیا تنازع تھا۔

پریانتھا صدر سری سینا کے 11 بہن بھائیوں میں سب سے چھوٹے تھے اور چاولوں کی تجارت اور ریتی بجری کے کاروبار سے منسلک تھے۔

اپنے پیش رو مہندا راجہ پکسے کے برعکس صدر سری سینا نے اپنے بھائیوں اور دیگر اہلِ خانہ کو سرکاری عہدوں پر تعینات کرنے سے گریز کیا ہے اور ان کے تمام قریبی عزیز سیاست سے دور ہیں اور سرکاری تحفظ اور پروٹوکول کے بغیر زندگی گزارتے ہیں۔

بھائی پر حملے کے وقت صدر سری سینا چین کے چار روزہ سرکاری دورے پر تھے جہاں سے وہ اتوار کی شب وطن واپس لوٹیں گے اور پیر کو اپنے بھائی کی آخری رسومات میں شریک ہوں گے۔

XS
SM
MD
LG