رسائی کے لنکس

سنجے دت کی زندگی کی ’نیّا‘ ایک بار پھر بھنورکی زد میں آگئی ہے۔ وہ خود جیل میں سزا کاٹ رہے ہیں جبکہ ان کی شریک ِحیات مانیتا کے پھیپھڑوں کی سرجری کے بعد اب جگر میں ٹیومر کا انکشاف ہوا ہے۔

بالی وڈ کے ماچو مین اور ہردلعزیز ’منابھائی‘ کے پاس شہرت، عزت او ر دولت کسی چیز کی کمی نہیں لیکن ان سب کے باوجود انہیں قسمت کا دھنی بھی نہیں کہا جاسکتا کیوں کہ انہیں زندگی کے ہر موڑ پر کسی نہ کسی صدمے کا سامنا کرنا پڑا۔

کم عمری میں ہی اپنے ماں اداکارہ نرگس سے دائمی جدائی، پھر 2005میں والد سنیل دت کی موت، پہلی بیوی ریچا شرما کا برین ٹیومر کے ہاتھوں دنیا سے رخصت ہونا اور بار بار جیل یاترا۔ ان سب دکھوں اور پریشانیوں کو جھیلتے جھیلتے اب جب بظاہر سب کچھ ٹھیک چل رہا تھا کہ سنجے کو ایک اور بڑی مصیبت نے آ گھیرا ہے او ر و ہ ہے ان کی دوسری بیوی مانیتا کی سنگین بیماری۔

ممبئی بم حملوں کے الزام میں سزا کاٹتے سنجے دت آج کل پیرول پر ہیں اور پیرول بھی انہیں بیمار بیوی کی دیکھ بھال کے لئے دیا گیا ہے۔ بھارتی اخبار ’ٹائمز آف انڈیا‘ کے مطابق بالی وُوڈ کے اسٹرانگ مین سنجے دت نے جب مانیتا کو اسپتال کے بیڈ پر بے ہوشی کے عالم میں دیکھا تو وہ خود پر قابو نہ رکھ سکے اور بکھر گئے۔

مانیتا کو منگل کے روز پھیپھڑوں میں انفیکشن کے باعث اسپتال میں داخل کیا گیا تھا۔ ڈاکٹر اجے چوغلے کا کہنا ہے کہ مانیتا دت کی حالت ٹھیک نہیں۔ ان کے پھیپھڑوں کی ایک سرجری ہو چکی ہے جبکہ جگر میں بھی ٹیومر ہے۔

مانیتا کی سرجری کے بعد سے سنجے دت ان کے سرہانے موجود ہیں۔ جیسے جیسے مانیتا کی بیماری طول پکڑ رہی ہے سنجے گھبراہٹ اور خوف کا شکار ہوتے جا رہے ہیں۔

سنجے کے قریبی ذرائع کا کہنا ہے کہ وہ اسپتال میں تنہا اور دکھی ہیں ۔ اسپتال کا اسٹاف ان کی دلجوئی میں مصروف رہتا ہے۔ سنجے اور مانیتا کے دوجڑواں بچے اقرا اور شاہران ہیں۔
XS
SM
MD
LG