رسائی کے لنکس

ہم جنس شادی کا لائسنس جاری کرنے سے انکار، کاؤنٹی کلرک جیل میں بند


امریکہ کے ایک ضلعی جج ڈیوڈ بنگ نے کہا کہ وہ اس وقت تک جیل میں رہیں گی جب تک وہ ان کا حکم ماننے پر تیار نہیں ہوتی ہیں۔

امریکی ریاست کینٹکی میں ایک کاؤنٹی کلرک کو جیل بھیجنے کے خلاف سیکڑوں افراد نے مظاہرہ کیا جس نے ایک جج کے اس حکم کو ماننے سے انکار کر دیا تھا جس میں اسے ہم جنس افراد کو شادی کے لائسنس جاری کرنے کا کہا گیا تھا۔

رون کاؤنٹی کی کلرک کم ڈیوس نے کہا کہ سپریم کورٹ کی طرف سے حال ہی میں دیا گیا فیصلہ اس کے مسیحی عقیدے کے خلاف ہے۔

ڈیوس کے دفتر میں نائبین نے جمعہ کو اس خوف سے ایک ہی جنس کے تین جوڑوں کو شادی کے لائسنس جاری کر دیے کہ اگر انہوں نے ایسا نہ کیا تو ان کو جرمانے اور قید کی سزا ہو سکتی ہے۔

تاہم اس بارے میں رائے منقسم ہے کہ آیا یہ لائسنس قانونی ہیں یا نہیں۔ عام طور پر ان کے لیے منتخب کلرک کے دستخط ضروری ہیں جو اس معاملے میں کم ڈیوس ہیں۔

ڈیوس نے جمعرات کو جیل سے رہا کیے جانے کے موقع سے فائدہ اٹھانے سے انکار کر دیا۔ امریکہ کے ایک ضلعی جج ڈیوڈ بنگ نے کہا کہ وہ اس وقت تک جیل میں رہیں گی جب تک وہ ان کا حکم ماننے پر تیار نہیں ہوتی ہیں۔

ہفتے کو کم ڈیوس کے شوہر جو نے قریب ہی واقع کارٹر کاؤنٹی جیل کے باہر لوگوں کے اجتماع سے خطاب کیا جہاں ان کی اہلیہ توہین عدالت کے الزام میں بند ہیں۔ ڈیوس نے اجتماع کو بتایا کہ "میرا آپ سے وعدہ ہے کہ وہ جھکیں گی نہیں"۔

ڈیوس کے وکیل نے کہا کہ وہ اسی صورت مانیں گی اگر ریاستی قوانین میں ترمیم کر دی جائے کہ منتخب کاؤنٹی کلرکوں کو شادی کا لائسنس جاری کرنے کا اختیار نہ ہو۔ ان کا موقف ہے کہ ایک ہی جنس کے جوڑوں کو جاری کیے گئے لائسنس قانونی نہیں ہیں۔

ریاست کی مقننہ کا دوبارہ اجلاس آئندہ سال جنوری سے پہلے نہیں ہو گا۔ ممکنہ طور پر ڈیوس کو کئی ماہ تک جیل میں رہنا پڑے گا۔

XS
SM
MD
LG