رسائی کے لنکس

عالمی ادارہ صحت کے ایک ترجمان کے مطابق دیگر 12 بچوں میں پولیو کی علامات ظاہر ہونے پر ان کی جانچ کی جارہی ہے۔

عالمی ادارہ صحت نے شام میں پولیو وائرس کی موجودگی کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ ملک شمال مشرق میں دس کم عمر بچے اس وائرس کا شکار ہوگئے ہیں۔

ایک ترجمان نے منگل کو کہا کہ ادارہ 12 مزید بچوں کی جانچ بھی کر رہا ہے جن میں پولیو وائرس سے متاثر ہونے کی علامات سامنے آئی ہیں۔

جن بچوں میں اس وائرس کی تصدیق ہوئی ہے وہ یا تو نومولود ہیں یا پھر انتہائی کم عمر اور کہا جا رہا ہے کہ ممکنہ طور پر ان بچوں کا پولیو سے بچاؤ کے قطروں کا کورس مکمل نہیں ہوا تھا۔

پولیو وائرس آلودہ پانی اور خوراک کے ذریعے تیزی سے منتقل ہو سکتا ہے۔ شام میں 1999 کے بعد سے پولیو کا کوئی بھی کیس سامنے نہیں آیا لیکن عالمی ادارہ صحت ’ڈبلیو ایچ او‘ نے رواں ماہ کے اوائل میں متنبہ کیا تھا کہ ملک میں جاری خانہ جنگی کے باعث اس بات کا خدشہ بڑھ گیا کہ یہاں پولیو وائرس دوبارہ سے بچوں کو متاثر کر سکتا ہے۔

شام میں دو سال سے زائد عرصے سے جاری لڑائی کے باعث بہت سے علاقوں تک صحت کی بنیادی سہولتیں بھی فراہم نہیں کی جا سکی ہیں جب کہ ملک کی تقریباً ایک تہائی آبادی کو اپنے گھروں کو چھوڑ کر محفوظ مقامات پر منتقل ہونا پڑا۔

عالمی ادارہ صحت نے منگل کو متنبہ کیا ہے کہ یہ وائرس دیگر علاقوں تک بھی پھیل سکتا ہے۔
XS
SM
MD
LG