رسائی کے لنکس

تھائی لینڈ انتخابات: کئی امیدواروں کے نتائج کی توثیق نہ ہوسکی


مس ینگ لک شیناوترا

مس ینگ لک شیناوترا

تھائی لینڈ کے حالیہ عام انتخابات میں اکثریت حاصل کرنے والی حزبِ مخالف کی رہنما ینگ لک شیناوترا نے الیکشن کمیشن کی جانب سے اپنی کامیابی کا اعلان روکے جانے کے باوجود اس یقین کا اظہار کیا ہے کہ وہ ملک کی پہلی خاتون وزیرِاعظم منتخب ہونے میں کامیاب ہوجائیں گی۔

ینگ لک رواں ماہ منعقدہ 500 رکنی پارلیمان کے انتخابات میں کامیابی حاصل کرنے والے ان 142 امیدواروں میں شامل ہیں جن کی کامیابی کا سرکاری اعلان دھاندلی اور دیگر شکایات کی بنیاد پر الیکشن کمیشن کی جانب سے منگل کے روز روک دیا گیا تھا۔

تاہم بدھ کے روزاپنے بیان میں مس شیناوترا کا کہنا تھا کہ انہیں امید ہے کہ الیکشن کمیشن ان کے اور ان کی جماعت 'پیو تھائی پارٹی' کے ساتھ انصاف کرے گا۔

تھائی الیکشن کمیشن نے ملک کے موجودہ وزیرِاعظم ابھیشیت ویجاجیوا کی کامیابی کا حتمی اعلان بھی روک دیا ہے جن پر ووٹ خریدنے کا الزام عائد کیا گیا ہے۔انتخابات میں اپنی جماعت کی شکست کے باوجود ویجاجیوا پارلیمان میں اپنی ذاتی نشست بچانے میں کامیاب ہوگئے تھے۔

الیکشن کمیشن کی جانب سے مس ینگ لک کے خلاف آنے والی شکایات کی وضاحت نہیں کی گئی ہے۔ انتخابات میں ینگ لک کی جماعت نے 500 کے ایوان میں 265 نشستوں کے ساتھ اکثریت حاصل کرلی تھی اور وہ چند دیگر چھوٹی جماعتوں کے ساتھ اتحاد قائم کرکے حکومت تشکیل دینے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے۔

تھائی لینڈ کا الیکشن کمیشن اب مس شینا وترا اور ان دیگر امیدواران کے معاملات کا جائزہ لے گا جن کی کامیابی کا حتمی اعلان روک دیا گیا ہے۔ نومنتخب پارلیمان کی جانب سے آئندہ ماہ سے اپنا کام شروع کرنے کے لیے ضروری ہے کہ کمیشن 500 میں سے 475 ارکان کی کامیابی کی توثیق کردے۔

الیکشن کمیشن ان امیدواران کے کیسز تھائی لینڈ کی آئینی عدالت کو بھجوادے گا جن کی کامیابی کی توثیق نہیں کی جائے گی جس کے بعد عدالت ان افراد کو نااہل قرار دینے یا نہ دینے سے متعلق فیصلہ کرنے کی مجاز ہوگی۔

تاہم ماضی میں اس کی کوئی مثال نہیں ملتی کہ تھائی الیکشن کمیشن نے سیاسی جماعتوں کے صفِ اول کے امیدواران کی کامیابی کی توثیق نہ کی ہو۔

واضح رہے کہ ینگ لک تھائی لینڈ کے سابق وزیرِاعظم تھاکسن شینا وترا کی چھوٹی بہن ہیں جنہیں پانچ برس قبل فوج نے ایک پرامن بغاوت کے ذریعے اقتدار سے بے دخل کردیا تھا۔ بدعنوانی کے ایک مقدمہ میں سزا یافتہ تھاکسن ان دنوں جلاوطنی کی زندگی گزار رہے ہیں۔

الیکشن کمیشن پہلے ہی مس ینگ لک کو انتخابی مہم کے دوران نوڈلز پکانے اور انہیں رائے دہندگان میں تقسیم کرکے ووٹ خریدنے کی کوشش کرنے کے الزام سے بری کرچکا ہے۔

XS
SM
MD
LG