رسائی کے لنکس

ٹرمپ کی عبوری ٹیم کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ ٹھومس بوزرٹ ہوم لینڈ سکیورٹی، انسداد دہشت گردی اور سائبر سکیورٹی کے امور پر صدر کے مشیر ہوں گے، جب کہ وہ پالیسی وضع کرنے اور عمل در آمد کے سلسلے میں کابینہ سے رابطے کا کام انجام دیں گے

منتخب امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے منگل کے روز ہوم لینڈ سکیورٹی اور انسداد دہشت گردی کے سربراہ کے طور پر، ٹھومس بوزرٹ کو نامزد کیا ہے، جو قومی سلامتی کے امور پر ایک تجربہ کار شخص ہیں۔
ٹرمپ کی عبوری ٹیم کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ ٹھومس بوزرٹ ہوم لینڈ سکیورٹی، انسداد دہشت گردی اور سائبر سکیورٹی کے امور پر صدر کے مشیر ہوں گے، جب کہ وہ پالیسی وضع کرنے اور عمل در آمد کے سلسلے میں کابینہ سے رابطے کا کام انجام دیں گے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ قومی سلامتی کے مشیر کے ساتھ ساتھ یہ ایک علیحدہ عہدہ ہوگا جسے بحال کیا جا رہا ہے‘‘۔

پالیسی ساز ایک طویل مدت سے اس بات پر مباحثہ کرتے رہے ہیں آیا قومی سلامتی کے امور سے متعلق کام وائٹ ہاؤس کے دائرہٴ عمل سے باہر آزادانہ طور پر کارآمد ثابت ہوگا۔

بوزرٹ ٹرمپ کے قومی سلامتی کے مشیر، ریٹائرڈ لیفٹیننٹ جنرل مائیکل فلن کے ساتھ قریب رہ کر کام کریں گے۔ اِن دِنوں، بوزرٹ ’سی ڈی ایس کلسلٹنگ‘ کے ادارے میں ’رسک منیجمنٹ‘ کے سربراہ کے طور پر فرائض انجام دے رہے ہیں۔ صدر جارج ڈبلیو بش کے دور میں، وہ ہوم لینڈ سکیورٹی کے لیے صدر کے معاون کے طور پر کام کر چکے ہیں۔

وہ ’ایٹلانٹک کونسل‘ کے ایک فیلو ہیں، اور 2003ء سے سائبر سکیورٹی پر مباحثوں میں شرکت کرتے رہے ہیں۔

تبصرے دکھائیں

XS
SM
MD
LG